سندھ میں حکمرانوں نے عوام کے مسائل حل نہیں کئے‘ اسد اللہ بھٹو

اتوار جون 21:10

کراچی ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 جون2018ء) متحدہ مجلس عمل کے مرکزی رہنماء اور این اے 242 پر نامزد امیدوار اسد اللہ بھٹو نے کہا ہے کہ سندھ میں حکمرانوں نے عوام کے مسائل حل کرنے کی بجائے دیہی و شہری تفریق پیدا کر رکے لڑاؤ اور حکومت کرو کی پالیسی پر عمل کیا جس کا نتیجہ یہ نکلا کہ آج ملک کا سب سے بڑا شہر کچرا کنڈی میں تبدیل اور کراچی تا کشمور عوام پانی،، بجلی،، تعلیم و صحت سمیت زندگی کی بنیادی سہولتوں سے بھی محروم ہیں۔

جاری کردہ اعلامیہ کے مطابق ان خیالات کا اظہار انہوں نے اتوار کو کوئٹہ ٹاؤن کے مقامی ہال میں ایم ایم اے زون کجرو کے تحت منعقدہ عید ملن پارٹی سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ پی ایس 99 پر امیدوار اور جے یو آئی ضلع شرقی کے امیر مولانا محمد غیاث، امیر زون عبد الواحد شیخ، اور قیم امین اشعر نے بھی خطاب کیا۔

(جاری ہے)

عید ملن تقریب میں زون بھر سے کارکنان اور علاقہ معززین بڑی تعداد میں شریک تھے۔

اسد اللہ بھٹو نے مزید کہا کہ سابقہ اتحادی جماعتوں کی وجہ سے کراچی بجلی،، پانی سمیت دیگر مسائل کا سامنا ہے جس کا واحد حل انتخابات میں اہل و دیانتدار قیادت کو آگے لانا ہے۔ پی ایس 100 کے امیدوار ضلع شرقی کے امیر محمد یونس برانائی نے کہا کہ ووٹ کی پرچی کے ذریعے ہمیں اپنی اور ملک کی تقدیر بدلنے کا موقع مل رہا ہے۔