حکومت بلوچستان ترک سرمایہ کاروں کو ہرممکن سہولیات فراہم کرے گی،جام کمال

ترکی مسلمان ممالک کیلئے ایک روڈ ماڈل کی حیثیت رکھتا ہے ،پاک ترک تعلقات میں مزید گہرائی آتی جارہی ہے اور دونوں ممالک کے مابین عوامی تعلقات فروغ پار ہے ہیں وزیراعلیٰ بلوچستان کی ترک سفیر سے بات چیت

بدھ نومبر 23:09

حکومت بلوچستان ترک سرمایہ کاروں کو  ہرممکن سہولیات فراہم کرے گی،جام ..
کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 14 نومبر2018ء) وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہاہے کہ پاکستان اور ترکی کے مابین گیرے برادرانہ تعلقات ہیں جو وقت کے ساتھ مزیدمضبوط ہو رہے ہیںجبکہ دونوں ممالک کے عوام کے درمیان پیار و محبت کا رشتہ بھی بڑھ رہا ہے، حکومت بلوچستان ترک سرمایہ کاروں کو صوبہ کے مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کرنے کے لئے ہرممکن معاونت فراہم کرے گی۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے پاکستان میں تعینات ترکی کے سفیر آئی مصطفی یرڈیکلMr. I Mustafa Yurdakulسے بات چیت کرتے ہوئے کیا جنہوں نے بدھ کے روز یہاں ان سے ملاقات کی۔وزیرا علیٰ نے ترکی کے سفیر سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ پاک ترک تعلقات میں مزید گہرائی آتی جارہی ہے اور دونوں ممالک کے مابین عوامی تعلقات فروغ پار ہے ہیں جس سے دونو ں ممالک کے باہمی تعلقات کو مزید فروغ حاصل ہوگا، انہوں نے کہا کہ ترکی مسلمان ممالک کے لئے ایک روڈ ماڈل کی حیثیت رکھتا ہے ، وزیر اعلیٰ نے ترکی کے سفیر کو صوبے کے مختلف شعبوں بالخصوص معدنیات، ماہی گیری اور سیاحت کے شعبوں میں ترقی اور سرمایہ کاری کے روشن امکانات سے آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ بلوچستان میں مختلف قیمتی معدنیات کے وسیع ذخائر موجود ہیں اور یہاں معدنی صنعت کے فروغ کی بہت گنجائش موجود ہے ، وزیر اعلیٰ نے کہاکہ سی پیک اس خطہ کی ترقی اور غربت کے خاتمے میں اہم کردار ادا کریگاجس سے تمام ممالک منافع اٹھاسکتے ہیں تاہم اس سلسلے میں حکومت تکنیکی ماہرین اور افرادی قوت کی تربیت کے لئے کوششیں کر رہی ہے اور اس سلسلے میں دوست ممالک سے بھی تعاون جاری ہے، وزیر اعلیٰ نے کہا کہ بلوچستا ن کے شعبہ ماہی گیری اور ساحلی علاقوں کی ترقی کے شعبہ میں بھی بہترین سرمایہ کاری کی جاسکتی ہے،جبکہ بلوچستان کا ساحل سیاحت کے حوالے سے بھی انتہائی اہمیت کا حامل ہے اور سیاحت کے فروغ کے لئے حکومت اقدامات اٹھارہی ہے اوراس سلسلے میں ترک حکومت کی معاونت کا خیر مقدم کریگی ، امن وامان کی صورتحال کے حوالے سے وزیراعلیٰ نے کہاکہ گذشتہ کچھ سالوں میں بلوچستان کو مشکل حالات کا سامنا کرنا پڑا ہے تاہم اب امن وامان کی صورتحال میں نمایاں بہتری آئی ہے اور سرمایہ کاروں کے لئے سازگار ماحول موجود ہے،حکومت افغانستان سے منسلک سرحد پر باڑ لگا رہی ہے جس سے دہشت گردی اور غیر قانونی آمدو رفت میں نمایاں کمی آئے گی۔

(جاری ہے)

وزیر اعلیٰ نے کہا کہ بلوچستان میں اتنے وسائل موجود ہیں جس سے نہ صرف یہ صوبہ بلکہ پورا ملک ترقی کرسکتا ہے تاہم ان وسائل کو بروئے کار لانے کے لئے صوبائی حکومت دوست ممالک کے سرمایہ کاروں کو ہر سطح پر خوش آمدید کہے گی اور انہیں بہتر سے بہتر سرمایہ کاری کے مواقع فراہم کریگی۔وزیر اعلیٰ نے کہا کہ ترکی کے ساتھ بذریعہ سڑک اور ریل کے تجارتی روابط کو مزید بڑھایا جاسکتا ہے اس سلسلے میں مزید بہتر حکمت عملی طے کرنے کی ضرورت ہے، اس موقع پر ترکی کے سفیر نے وزیر اعلیٰ بلوچستان کی ترقی کے وژن کو سراہتے ہوئے ترک حکومت کی طرف سے ہرممکن تعاون اور سرمایہ کاری کے فروغ میں کردار ادا کرنے کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ بلوچستان میں سرمایہ کاری کے وسیع امکانات موجودہیں جس سے ترک سرمایہ کار منافع بخش سرمایہ کاری کر سکتے ہیں،ترک سفیر نے وزیر اعلیٰ بلوچستان کی کامیابی کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے تہذیبی وثقافتی روابط کو مزید بہتر بنانے پر زور دیا۔

بعدازاں وزیر اعلیٰ اور ترک سفیر نے یادگاری شیلڈ کا تبادلہ کیا۔

مزید متعلقہ خبریں پڑھئیے‎ :