چیف جسٹس مجاہد کامران کے انکشافات پر اعلیٰ سطحی جے آئی ٹی تشکیل دیں ، قرار داد پنجاب اسمبلی میں جمع

ہفتہ نومبر 16:44

چیف جسٹس مجاہد کامران کے انکشافات پر اعلیٰ سطحی جے آئی ٹی تشکیل دیں ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 17 نومبر2018ء) مسلم لیگ (ن) نے چیف جسٹس آف پاکستان سے پنجاب یونیورسٹی کے سابق وائس چانسلر ڈاکٹر مجاہد کامران کے انکشافات پر اعلیٰ سطحی جے آئی ٹی تشکیل دینے کے مطالبے پر مبنی قرار داد پنجاب اسمبلی سیکرٹریٹ میں جمع کروا دی ۔ مسلم لیگ (ن) کی رکن پنجاب اسمبلی حنا پرویز بٹ کی طرف سے جمع کروائی گئی قرار داد کے متن میں کہا گیا ہے کہ سابق وی سی پنجاب یونیورسٹی مجاہد کامران نے نیب سے متعلق حیران کن انکشاف کیے ہیں جس کے مطابق نیب کی حوالات عقوبت خانوں میں تبدیل ہو چکی ہیں،لوگوں کو من مرضی کے نتائج حاصل کرنے کیلئے تشدد کا نشانہ بنایا جا تا ہے جبکہ ملزمان کو اپنے مذموم مقاصد کیلئے وعدہ معاف گواہ بننے کیلئے مجبور کیا جاتا ہے،زیر حراست ملزمان کو ان کے اہلخانہ کے سامنے تشدد کا نشانہ بنایا جاتا ہے جو کہ ملکی و انسانی حقوق کی کھولی خلاف ورزی ہے۔

(جاری ہے)

قرار داد کے متن میں مزید کہا گیا کہ نیب کازیر حراست ملزمان کے ساتھ ایسا سلوک نیب قوانین کی دھجیاں اڑانے کے مترادف ہے،نیب اور حکومت کا گٹھ جوڑ کھل کر سامنے آگیا ہے،نیب حکومت کے مخالفین کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنارہا ہے،مجاہد کامران ہی نہیں چیف جسٹس بھی نیب کے رویے سے ناخوش ہیں۔زیر حراست لوگوں کوزبردستی وعدہ معاف گواہ بنانا انتہائی قابل مذمت ہے۔لہٰذا یہ ایوان چیف جسٹس آف پاکستان سے مطالبہ کرتا ہے کہ ڈاکٹر مجاہد کامران کے بیان پر سو موٹو نو ٹس لیں،نیب کے معاملے پر اعلی سطحی جے آئی ٹی تشکیل دیں۔