خاتون پر شوہر کے 9 سالہ بھتیجے کے ساتھ جنسی زیادتی کا الزام

بھارت میں بچے کو زبردستی جنسی طور پر استعمال کرنے پر 36 سالہ خاتون کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان منگل فروری 10:39

خاتون پر شوہر کے 9 سالہ بھتیجے کے ساتھ جنسی زیادتی کا الزام
بھارت (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار-12 فروری 2019ء) :خاتون پر شوہر کے 9 سالہ بھتیجے کے ساتھ جنسی زیادتی کا الزام ، بھارت میں 9 سالہ بچے کو زبردستی جنسی طور پر استعمال کرنے پر 36 سالہ خاتون کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا تھا کہ بھارتی کی ریاست کیرالہ میں پولیس نے ایک خاتون کے خلاف جنسی زیادتی کا مقدمہ درج کر لیا ہے۔خاتون نے اپنے شوہر کے 9 سالہ بھتیجے کو ایک سال تک جنسی طور پر استعمال کیا۔

متاثرہ بچےنے مقامی ڈاکٹرز کو جنسی زیادتی سے متعلق آگاہ کیا تھا جس پر ڈاکٹر نے چائلڈ پروٹیکشن ڈپارٹمنٹ کو آگاہ کیا۔جس کے بعد پولیس بھی متحرک ہوئی اور بچوں کو جنسی زیادتی سے بچاؤ کے قانون کی شق 5 اور 6 کے تحت مقدمہ درج کر لیا۔پولیس کا کہنا ہے کہ متاثرہ بچہ خاتون کا سسرالی رشتہ دار بھی ہے۔

(جاری ہے)

اور ایک ہی محلے میں رہائش پذیر ہیں۔دونوں گھرانوں کے درمیان جائیداد کی تقسیم پر بھی جھگڑا ہے۔

مقدمے کی تفتیش کے دوران اس پہلو کو بھی مد نظر رکھا جائے گا،پولیس نے متاثرہ بچے اور ڈاکٹر کا بیان قلم بند کرنے کے بعد تفتیش کا آغاز کر دیا تاہم خاتون کی گرفتاری عمل میں نہیں لائی گئی۔قبل ازیں ایسے ہی ایک مقدمے میں پولیس نے اہل خانہ کے درمیان صلح صفائی کروا کر معاملہ دبا دیا تھا۔واضح رہے بچوں سے زیادتی کا یہ کوئی پہلا واقعہ نہیں۔پاکستان اور بھارت سمیت کئی ملکوں میں بچوں کا جنسی استحصال کیا جاتا ہے۔

سوشل میڈیا صارفین نے کم سن بچیوں سے زیادتی کے واقعات پر مطالبہ کیا ہے کہ ایسے درندوں کو سر عام پھانسی پر لٹکا دینا چاہئیے تاکہ ایسا ارادہ رکھنے والوں کو عبرت حاصل ہو سکے اورکم سن بچے محفوظ ہوں۔تاہم اس واقعے میں حیران کن بات یہ ہے کہ بچے کے ساتھ زیادتی کرنے والا کوئی مرد نہیں بلکہ عورت ہے۔