Live Updates

امریکی حراست سے انس حقانی اور طالبان کی حراست سے امریکی پروفیسرز کی رہائی میں پاکستان نے اہم ترین کردار ادا کیا

پاکستان افغانستان میں کیون کنگ اور ٹیموتھی ویکس کی رہائی کا خیر مقدم کرتا ہے، پاکستان نے اسکی مکمل حمایت کی اور اسے ممکن بنانے میں اپنا کردار ادا کیا: وزیراعظم عمران خان کا ٹویٹ

Usman Khadim Kamboh عثمان خادم کمبوہ منگل نومبر 21:57

امریکی حراست سے انس حقانی اور طالبان کی حراست سے امریکی پروفیسرز کی ..
اسلام آباد (اردوپوائنٹ اخبار تازہ ترین۔19نومبر2019ء) امریکی حراست سے انس حقانی سمیت 3طالبان رہنماؤں اور طالبان کی حراست سے دو امریکی پروفیسرز کی رہائی میں پاکستان نے اہم ترین کردار ادا کیا۔ وزیراعظم عمران خان نے اپنے ٹویٹ پیغام میں کہا ہے کہ پاکستان افغانستان میں کیون کنگ اور ٹیموتھی ویکس کی رہائی کا خیر مقدم کرتا ہے، پاکستان نے اسکی مکمل حمایت کی اور اسے ممکن بنانے میں اپنا کردار ادا کیا۔

انہوں نے کہا ہے کہ پاکستان اس معاملے کو ممکن بنانے والوں کی کاوشوں کو سراہتا ہے۔ امن کی واپسی اور افغان عوام کو درپیش مصائب کے خاتمے کی عالمی کاوشوں کے ضمن میں پاکستان نے اسکی مکمل حمایت کی ہے۔ 
 
انہوں نے مزید کہا ہے کہ افغان تنازعے کے بات چیت پر مبنی سیاسی حل کیلئے اٹھائے جانے والے اقدامات کی حمایت ہماری قومی پالیسی کا حصہ ہے۔

(جاری ہے)

ہمیں امید ہے کہ اس پیشرفت سے فریقین کے اعتماد میں اضافہ ہوگا اور وہ امن عمل کے جانب دوبارہ لوٹیں گے۔ پاکستان اس امن عمل میں معاونت کا پختہ عزم کئے ہوئے ہے۔
 
 
خیال رہے کہ امریکہ نے انس حقانی سمیت 3 طالبان رہنماؤں کو رہا کردیا۔ تفصیلات کے مطابق طالبان رہنماؤں کی رہائی کے بدلے میں افغان طالبان نے دو امریکی پروفیسرز کو رہا کردیا ہے۔

افغان حکومت نے بھی امریکی حکومت کے اس فیصلے کی تائید کی ہے۔ ذرائع کے مطابق افغان طالبان کی قید میں موجود دو غیر ملکیوں کو رہا کردیا گیا، امریکیہ کی ایک یونیورسٹی کے پروفیسرز کو امریکی ہیلی کاپٹر کے ذریعے زابل سے روانہ کیا گیا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ امریکی پروفیسرز کی رہائی کے بدلے طالبان کے 3 رہنماؤں کو رہا کیا گیا ہے۔افغان طالبان نے اس حوالے سے کہا ہے کہ انہوں نے یرغمال بنائے گئے دو غیر ملکیوں کو رہا کردیا ہے۔ خیال رہے کہ ان دونوں غیر ملکیوں کو 2016 میں کابل سے اغواء کیا گیا تھا۔ افغان پولیس ذرائع نے بتایا ہے کہ آج صبح دس بجے امریکہ کی ایک یونیورسٹی کے دونوں پروفیسرز کو صوبے زابل سے رہا کیا گیا جو امریکی ہیلی کاپٹروں میں زابل سے روانہ ہوئے۔
ڈیجیٹل پاکستان کی بنیاد سے متعلق تازہ ترین معلومات