حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں کا اعلان کر دیا

پٹرول، مٹی کا تیل اور لائٹ اسپیڈ ڈیزل کی قیمتیں برقرار رکھنے کا فیصلہ، ہائی اسپیڈ ڈیزل 4 روپے فی لیٹر مہنگا کر دیا گیا

muhammad ali محمد علی پیر نومبر 21:10

حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں کا اعلان کر دیا
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 نومبر2020ء) حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں کا اعلان کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق وزارت خزانہ نے اوگرا کی جانب سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے حوالے سے بھیجی گئی سمری پر وزیراعظم سے مشاورت کے بعد نئی قیمتوں کا اعلان کیا ہے۔ حکومت کی جانب سے یکم دسمبر سے سوائے ہائی اسپیڈ ڈیزل کے دیگر تمام پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ نہ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

حکومت نے پٹرول، مٹی کا تیل اور لائٹ اسپیڈ ڈیزل کی قیمتیں برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ جبکہ ہائی اسپیڈ ڈیزل کی فی لیٹر قیمت میں 4 روپے کا اضافہ کر دیا گیا۔ پٹرول کی فی لیٹر قیمت 100روپے69 پیسے، لائٹ ڈیزل کی قیمت 62 روپے 86 پیسے، مٹی کے تیل کی قیمت 65 روپے 29 پیسے فی لیٹر برقرار رکھی گئی ہے۔

(جاری ہے)

جبکہ ہائی اسپیڈ ڈیزل کی نئی قیمت 105روپے 43 پیسے فی لیٹرمقرر کی گئی ہے۔

نئی قیمتوں کا اطلاق آج رات 12 بجے سے ہوگا۔ 2 روز قبل اوگرا کی جانب سے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی سمری تیار کی گئی تھی۔ تیار کردہ سمری میں پٹرول 2 روپے 50 پیسے فی لیٹر جبکہ ڈیزل کی قیمت پونے 3 روپے بڑھانے کی سفارش کی گئی۔ اوگرا نے سمری وزارت خزانہ کو ارسال کرتے ہوئے قیمتوں میں 15 روز کیلئے اضافہ کرنے کی سفارش کی تھی۔ اس سے قبل حکومت نے 15 نومبر کو پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی کا اعلان کیا تھا۔

پیٹرول کی قیمت میں فی لیٹر ایک روپے 71پیسے کی کمی گئی۔ جس کے بعد پیٹرول کی نئی قیمت 100روپے69 پیسے ہوگئی۔ ہائی اسپیڈ ڈیزل کی قیمت میں ایک روپے79پیسے کمی کی گئی جس کے بعد ہائی اسپیڈ ڈیزل کی نئی قیمت 101روپے 43 پیسے فی لیٹرمقرر ہوئی۔ لائٹ ڈیزل کی قیمت 62 روپے 86 پیسے جبکہ مٹی کے تیل کی قیمت 65 روپے 29 پیسے فی لیٹر برقرار رکھی گئی۔ اوگرا نے وزارت پٹرولیم کو بھیجی گئی سمری میں پٹرولیم مصنوعات کی فی لیٹر قیمتوں میں 3 روپے سے زائد سفارش کی تھی تاہم حکومت کی جانب سے صرف ایک روپے79 پیسے فی لیٹر کمی کی گئی۔

متعلقہ عنوان :