Sharabi - Joke No. 1494

شرابی - لطیفہ نمبر 1494

ایک شرابی اتنا بلا نوش تھا کہ پیسے نہ ہونے کی وجہ سے ایک روز نشے کی جھونک میں اس نے اپنی بیوی کو بھی ایک بوتل شراب کے عوض بیچ دیا۔ اگلے روز اسے اداس، بے قرار اور پریشان دیکھ کر اس کے پڑوسی نے کہا۔ ”اب تمہیں پچھتاوا ہو رہا ہے کہ بیوی جیسی نعمت کو کھو کرتم نے اپنے آپ پر ظلم کیا ہے۔ “ شرابی نے جواب دیا۔ ”ہاں ! اس کے نہ ہونے سے میں بہت اداس ہوں۔ اگر وہ ہوتی تو میں ایک بوتل اور لے سکتا تھا۔ “

مزید لطیفے

دفتر

Dufter

ایک سو اسی پونڈ

Aik so asi pound

وسیم اکرم

wasim akram

کار ڈرائیو

car driver

کتا

Kutta

ناو

Naooo

ایک بڑھیا

aik budiya

بوڑھی عورت

Borhi aurat

ایک دوت دوسرے دوست سے

Aik dost dusre dost se

بچہ عورت سے

Bacha aurat se

راہ گیر

Rahgir

استاد شاگرد سے

Ustad Shagird se

Your Thoughts and Comments