Sharabi - Joke No. 1494

شرابی - لطیفہ نمبر 1494

ایک شرابی اتنا بلا نوش تھا کہ پیسے نہ ہونے کی وجہ سے ایک روز نشے کی جھونک میں اس نے اپنی بیوی کو بھی ایک بوتل شراب کے عوض بیچ دیا۔ اگلے روز اسے اداس، بے قرار اور پریشان دیکھ کر اس کے پڑوسی نے کہا۔ ”اب تمہیں پچھتاوا ہو رہا ہے کہ بیوی جیسی نعمت کو کھو کرتم نے اپنے آپ پر ظلم کیا ہے۔ “ شرابی نے جواب دیا۔ ”ہاں ! اس کے نہ ہونے سے میں بہت اداس ہوں۔ اگر وہ ہوتی تو میں ایک بوتل اور لے سکتا تھا۔ “

مزید لطیفے

فقیر

Faqeer

شخص

shaks

رشید

Rasheed

استاد شاگرد سے

Ustaad shagird se

جہازوں کا اڈا

Jahazon Ka ada

بوڑھی عورت

Borhi aurat

عصمت چغتائی

ismat chughtai

استاد شاگرد سے

Ustaad shagird se

ملا نصیرالدیں

mullah naseer ud din

گاہک

ghak

دودھ والا

doodh wala

آدمی

aadmi

Your Thoughts and Comments