وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا ایرانی ہم منصب سے رابطہ ، افغانستان کی ابھرتی ہوئی صورتحال پر گفتگو

افغانستان میں قیام امن کیلئے علاقائی سطح پر تعاون ناگزیر ہے، افغانستان میں پنپنے والے معاشی بحران سے نمٹنے کیلئے مشترکہ کاوشیں بروئے کار لانے کی ضرورت ہے، شاہ محمود قریشی

پیر 18 اکتوبر 2021 21:18

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا ایرانی ہم منصب سے رابطہ ، افغانستان کی ابھرتی ہوئی صورتحال پر گفتگو
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 18 اکتوبر2021ء) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہاہے کہ افغانستان میں قیام امن کیلئے علاقائی سطح پر تعاون ناگزیر ہے، افغانستان میں پنپنے والے معاشی بحران سے نمٹنے کیلئے مشترکہ کاوشیں بروئے کار لانے کی ضرورت ہے۔ پیر کو ایران کے وزیر خارجہ حسین امیر عبداللہیان نے وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کے ساتھ ٹیلیفونک رابطہ کیا جس میں دونوں وزرائے خارجہ کے مابین علاقائی بالخصوص افغانستان کی ابھرتی ہوئی صورتحال سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔

ایرانی وزیر خارجہ نے وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی کو، اگلے ہفتے تہران میں متوقع، افغانستان کے قریبی ہمسایہ ممالک کے وزارتی سطح کے دوسرے اجلاس میں شرکت کی دعوت دی ۔

(جاری ہے)

وزیر خارجہ نے علاقائی سطح پر مشترکہ لائحہ عمل اپنانے کے حوالے سے پاکستان کے اقدام کی مکمل تائید اور حمایت پر ایرانی وزیر خارجہ کا شکریہ ادا کرتے ہوئے، اس اہم اجلاس کے بروقت انعقاد پر ایرانی وزیر خارجہ کو مبارکباد دی وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے توقع ظاہر کی کہ افغانستان کے قریبی ہمسایہ ممالک کے اجلاس کے انعقاد اور باہمی گفت و شنید سے علاقائی سطح پر تعاون کو مستحکم بنانے میں مدد ملے گی ۔

انہوںنے کہاکہ افغانستان کے حوالے سے ہمارے نقطہ نظر میں مماثلت اور ہم آہنگی خوش آئند ہے۔انہوںنے کہاکہ افغانستان میں قیام امن کیلئے علاقائی سطح پر تعاون ناگزیر ہے، افغانستان میں پنپنے والے معاشی بحران سے نمٹنے کیلئے مشترکہ کاوشیں بروئے کار لانے کی ضرورت ہے۔واضح رہے کہ افغانستان کے قریبی ہمسایہ ممالک کا اولین اجلاس، 8 ستمبر 2021 کو پاکستان کی دعوت پر بذریعہ ویڈیو لنک منعقد ہوا جس میں پاکستان،چین،ایران ،تاجکستان ،ترکمانستان اور ازبکستان کے وزرائے خارجہ نے شرکت کی اور اجلاس کے بعد ایک متفقہ اعلامیہ بھی جاری کیا گیا۔

اسلام آباد شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments