اُردو پوائنٹ پاکستان کراچیکراچی کی خبریںوزارت پانی و بجلی کے پاور ڈویژن نے ایک سال میں بجلی چوری اور لائن لاسز ..

وزارت پانی و بجلی کے پاور ڈویژن نے ایک سال میں بجلی چوری اور لائن لاسز سے متعلق اعداد و شمار جاری کردیئے

ایک سال کے دوران 238 ارب 97 کروڑ 90 لاکھ یونٹس کی بجلی چوری اور لائن لاسز ہو رہے ہیں،وزارت پانی و بجلی

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 اکتوبر2018ء)وزارت پانی و بجلی کے پاور ڈویژن نے کہاہے کہ ایک سال کے دوران 238 ارب 97 کروڑ 90 لاکھ یونٹس کی بجلی چوری اور لائن لاسز ہو رہے ہیں۔وزارت پانی و بجلی کے پاور ڈویژن نے ایک سال میں بجلی چوری اور لائن لاسز سے متعلق اعداد و شمار جاری کردیئے گئے۔ رپورٹ کے مطابق ایک سال کے دوران 238 ارب 97 کروڑ 90 لاکھ یونٹس کی بجلی چوری اور لائن لاسز ہورہے ہیں۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سب سے زیادہ بجلی چوری اور لائن لاسز پیسکو میں 36.4 فیصد، سکھر الیکٹرک پاور کمپنی 34.8 فیصد کے ساتھ دوسرے نمبر پر جبکہ حیدر آباد الیکٹرک پاور کمپنی 27.2 فیصد کے ساتھ تیسرے نمبر پر ہے۔پیسکو کے 5 ارب 3 کروڑ 20 لاکھ یونٹ چوری اور لائن لاسز، سیپکو کے ایک ارب 58 کروڑ 20 لاکھ یونٹس کے لاسز اور چوری جبکہ حیسکو کے ایک ارب 50 کروڑ 30 لاکھ یونٹس کی چوری اور لائن لاسز ہورہے ہیں۔

(خبر جاری ہے)

رپورٹ میں بتایا گیا کہ کیسکو میں ارب 30 کروڑ 10 لاکھ یونٹس کی چوری اور لائن لاسز ہورہے ہیں۔سب سے کم بجلی چوری اور لائن لاسز دارالحکومت اسلام آباد پاور کمپنی میں رپورٹ ہوئے۔ آئیسکو کے لائن لاسز 7.4 فیصد رہے۔ آئیسکو میں 85 کروڑ 10 لاکھ یونٹس کی چوری اور لائن لاسز ریکارڈ ہوا۔رپورٹ کے مطابق کم بجلی چوری اور لائن لاسز میں فیسکو دوسرے نمبر پر رہا جہاں بجلی چوری اور لائن لاسز کی شرح 8.7 فیصد رہی۔ فیسکو میں ایک ارب 23 کروڑ 60 لاکھ یونٹس کی بجلی چوری اور لائن لاسز جبکہ گیپکو تیسرے اور لیسکو چوتھے نمبر پر رہی۔

اپنی رائے کا اظہار کریں -

کراچی شہر کی مزید خبریں