ن لیگ نے استعفے دینے کی پھر مخالفت کر دی

پی پی کےبغیر استعفے‏دیے تو حکومت اہم بل پاس کرا لے گی، ہماری رائے ہے کہ استعفیٰ کے بجائے اسمبلی کا مستقل بائیکاٹ کیا جائے، ن لیگ

Danish Ahmad Ansari دانش احمد انصاری اتوار 5 دسمبر 2021 18:40

ن لیگ نے استعفے دینے کی پھر مخالفت کر دی
لاہور(اُردو پوائنٹ، اخبار تازہ ترین، 5دسمبر 2021) پی پی کےبغیر استعفے‏دیے تو حکومت اہم بل پاس کرا لے گی، ہماری رائے ہے کہ استعفیٰ کے بجائے اسمبلی کا مستقل بائیکاٹ کیا جائے، پی ڈی ایم کی بڑی جماعت ن لیگ نے ایک بار پھر اسمبلیوں سے استعفے دینے کی مخالفت کر‏دی۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ میں شامل بڑی جماعت مسلم لیگ ن نے ایک بار پھر اسمبلیوں سے استعفے دینے کی مخالفت کر‏دی۔

ذرائع کے مطابق پی ڈی ایم اسٹئیرنگ کمیٹی کے اجلاس میں استعفوں پر ن لیگ نے پھر مخالفت کرتے ہوئے کہا ‏کہ ہماری جماعت میں اسمبلی سے استعفوں پر دو رائے ہیں۔لیگی رہنما نے کہا کہ کچھ لوگ مخالف اوربعض استعفےمناسب وقت پر دینا چاہتے ہیں پی پی کےبغیر استعفے ‏دیے تو حکومت اہم بل پاس کرا لے گی۔

(جاری ہے)

لیگی رہنما کا کہنا تھا کہ استعفوں کی بجائے اسمبلی کامستقل بائیکاٹ کریں اگر مستقل بائیکاٹ کرنا ہے تو پی ‏پی کو ساتھ ملا لیں۔

لیگی رہنما مفتاح اسماعیل کا کہنا ہے کہ شہبازشریف نےکہا ہےکہ مرادعلی شاہ بھائی کی طرح ہے پی پی والے ‏دشمن نہیں ہیں۔اجلاس میں لانگ مارچ کو مارچ کے آخر میں کرنے کی تجویز پر اتفاق کرتے ہوئے کہا گیا کہ پی پی کو بھی اب ‏اتحاد میں شامل کر لیں۔

لاہور شہر میں شائع ہونے والی مزید خبریں:

Your Thoughts and Comments