عوام تحریک انصاف کے منشور،عمران خان کی قیادت سے متاثر ہوکر جوق در جوق تحریک انصاف میں شامل ہورہے ہیں،امتیاز شاہد

پیر اپریل 20:31

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 اپریل2018ء) خیبر پختونخواکے صوبائی وزیر قانون و پارلیمانی اُمور امتیاز شاہد قریشی نے کہا کہ عوام تحریک انصاف کے منشور،،عمران خان کی قیادت اور صوبائی حکومت سے متاثر ہوکر جوق در جوق تحریک انصاف میں شامل ہورہے ہیں، تحریک انصاف 2018 کے انتخابات میں کارکردگی کی بنیاد پر خیبرپختونخوا کی تاریخ بدل کر نہ صرف خیبرپختونخوا بلکہ وفاق میں بھی حکومت بنائے گی،اگلے عام انتخابات کے نتیجے میں عمران خان ہی اس ملک کے وزیر اعظم ہوں گے کیونکہ اس ملک کوایماندار قیادت کی ضرورت ہے جو صرف اور صرف عمران خان کی صورت میں ممکن ہوسکتی ہے۔

ان خیالات کا اظہار اُنہوں نے تپی کوہاٹ اربن 6کے علاقہ ڈاکٹر بانڈہ میں عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔

(جاری ہے)

وزیر قانون امتیاز قریشی نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت نے اپنے منشور کے مطابق سابق حکمرانوں کی کرپشن، رشوت، سفارش کلچر اور اداروں میں سیاسی مداخلت جیسی خرافات کا خاتمہ کیاہے اور قابل عمل اصلاحات کے ذریعے ایک دیرپا اور شفاف نظام کی بنیاد رکھ دی ہے اب عوام کی ذمہ داری بھی ہے کہ پہلے خود کو ٹھیک کریں اور پھر غلط کاموں کی نشاندہی میں حکومت کی مدد کریں، صوبائی حکومت شفافیت، قانون اور میرٹ کی بالادستی اور عوام کو معیاری خدمات کی فراہمی پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ کوہاٹ میں سب سے زیادہ ترقیاتی منصوبے پی ٹی آئی کی صوبائی حکومت مکمل کروا رہی ہے، وفاقی حکومت کا کوئی منصوبہ بھی آپ کو نظر نہیں آئے گا۔ ایسا علاقہ نہیں ہے جہاں پر ہم نے کوئی چھوٹا اور بڑا ترقیاتی منصوبہ شروع نہ کیا ہو، اس دفعہ بھی مخالفین کو منہ کی کھانا پڑے گی، ہم نے اپنے حلقہ میں ریکارڈ ترقیاتی کام کروائے ہیں اور آگے بھی کرواتے رہیں گے، ہم باتوں کی بجائے عمل پر یقین رکھتے ہیں،اُنہوں نے کہا کہ حلقہ پی کے 81میں بلا تفریق ترقیاتی کام جاری ہے جن میں ڈگری کالجز،ہسپتال،سڑکیں،آبنوشی سکیمیں ،سکولوں کی تعمیر سمیت درجنوں منصوبوں پر کام جاری ہے ان منصوبوں کی تکمیل سے حلقہ بھر میں انقلاب برپا ہوگا،وزیر قانون نے کہا کہ تعلیم، صحت، پولیس اور دیگر شعبوں میں عوام کو خدمات کی فراہمی، شفافیت، انصاف اور سیاست سے پاک با اختیار اداروں کا قیام پی ٹی آئی حکومت کے میگا پراجیکٹس ہیں، ہم گذشتہ 70سال کے تباہ حال اداروں کو ٹھیک کر رہے ہیں۔

افسوس اس بات کا ہے کہ مفاد پرست سیاستدانوں نے سکول، ہسپتال اور پولیس جیسے سماجی خدمت کے اہم ترین شعبوں کو بھی نہیں بخشا، سکولوں میں40ہزار آسامیاں خالی تھیں اور جو سٹاف موجود تھا وہ سفا رش پر لگایا گیا تھا، 50فیصد اساتذہ سکولوں میں حاضری نہیں دیتے تھے، بچوں کے بیٹھنے کے لئے کرسی تک دستیاب نہ تھی جبکہ پی ٹی آئی حکومت نے 40ہزار اساتذہ بھرتی کئے، سٹاف کو حاضری کاپابند بنایا، ہزاروں سکولوں میں فرنیچر اور دیگر سہولیات دیں۔وزیر قانون نے کہا کہ تحریک انصاف کی جدوجہد ضرور رنگ لائے گی اور ہمارا مشن اس وقت تک جاری رہے گا جب تک غریب عوام کو ان کے حقوق نہیں ملتے۔