بلوچستان ہائی کورٹ نے پی پی ایچ آئی ملازمین کی مستقلی کی درخواست آئندہ بجٹ کے بعد تک کیلئے ملتوی کردی

پیر اپریل 21:15

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 اپریل2018ء) بلوچستان ہائیکورٹ میں محکمہ صحت پی پی ایچ آئی کے کنٹریکٹ ملازمین کی مستقلی سے متعلق درخواست کی سماعت چیف جسٹس محمد نور مسکانزئی اور جسٹس ہاشم کاکڑ پر مشتمل بینچ نے کی سماعت میں درخواست گزار کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ پی پی ایچ آئی کے ڈھائی ہزار ملازمین 10 سال سے کنٹریکٹ پر کام کر رہے ہیں،تمام ملازمین کو پنجاب کی طرز پر مستقل کیا جائے، نما ئندہ پی پی ایچ آئی نے عدالت میں اپنا جواب داخل کراتے ہوئے کہا کہ انتظامی عملے کو مستقل کرنے کے حق میں ہے ٹیکنکل اسٹاف کو مستقل کرنے کا بوجھ برداشت نہیں کرسکتے، دوران سماعت چیف جسٹس محمد نور مسکا نزئی نے ریمارکس دئیے کہ ڈھائی ہزار ملازمین کو یک مشت مستقل کرنے سے صوبائی حکومت کا بھٹا بیٹھ جائے گا،درخواست کا آئندہ بجٹ پیش ہونے کے بعد جائزہ لیں گے، جس کے بعد کیس کی سماعت 13 جون تک ملتوی کردی گئی۔

متعلقہ عنوان :