والدہ کی تیمارداری کیلئے لندن جارہے ہیں‘ عدالت سے استثنیٰ نہ ملا تو آئندہ پیشی سے پہلے وطن واپس آجائیں گے،

قوم والدہ کے لئے خصوصی دعائیں کرے مسلم لیگ (ن) کی رہنما مریم نواز کا ٹویٹ

بدھ اپریل 12:09

والدہ کی  تیمارداری کیلئے لندن جارہے ہیں‘ عدالت سے استثنیٰ نہ ملا تو ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 اپریل2018ء) سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی اور مسلم لیگ (ن) کی رہنما مریم نواز نے کہا کہ والدہ کی تیمارداری کیلئے لندن جارہے ہیں‘ عدالت سے استثنیٰ نہ ملا تو آئندہ پیشی سے پہلے وطن واپس آجائیں گے۔ بدھ کو مریم نواز نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر اپنے پیغام میں کہا کہ والدہ کی تیمار داری کیلئے لندن جارہے ہیں۔

عدالت سے استثنیٰ نہ ملا تو آئندہ پیشی سے پہلے واپس آجائیں گے۔ انہوں عوام سے اپیل کی کہ وہ میری علیل والدہ کو خصوصی دعائوں میں یاد رکھیں۔ واضح رہے کہ بدھ کی صبح مسلم لیگ کے قائد اورسابق وزیراعظم نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن(ر) صفدر لندن روانہ لاہور ائرپورٹ سے لندن روانہ ہوئے۔ ان کی بیٹی مریم نواز،، داماد کیپٹن ریٹائرڈ صفدر اور نواسی ماہ نور بھی ان کے ہمراہ ہیں۔

(جاری ہے)

شریف فیملی قطر کی ایئرلائن کی پرواز کیو آر 629 کے ذریعے بیرون ملک روانہ ہوئی۔ نواز شریف لندن میں اپنی اہلیہ بیگم کلثوم نواز کی عیادت کریں گے اور ممکنہ طور پر 22 اپریل اتوار کو واپس آئیں گے۔شریف خاندان کے مطابق کلثوم نواز کی کیمو تھراپی کے بعد طبیعت انتہائی خراب ہے۔ نواز شریف، مریم اور صفدر نے بدھ سے جمعہ تک احتساب عدالت میں حاضری سے استثنیٰ کی درخواست دائر کردی ۔ چند ہفتے قبل نیب نے نواز شریف اور مریم نواز کا بیرون ملک فرار روکنے کے لیے ان کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کا کہا تھا لیکن حکومت نے ایسا نہیں کیا۔ نواز شریف، مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کیخلاف احتساب عدالت میں کرپشن کے تین مقدمات میں کارروائی ہورہی ہے۔

متعلقہ عنوان :