پولیس کا بچوں کے سامنے ماں کو برہنہ حالت میں الٹا لٹکا کر تشدد

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان بدھ اپریل 12:45

پولیس کا بچوں کے سامنے ماں کو برہنہ حالت میں الٹا لٹکا کر تشدد
فیصل آباد (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔18اپریل 2018ء) فیصل آباد میں ماں کو بچوں کے سامنے برہنہ حالت میں الٹا لٹکایا گیا اور تشدد کر کے رقم کی ادائیگی کے لیےمطالبہ کیا گیا قومی اخبار کی ایک رپورٹ کے مطابق شیخ اکرم نامی شخص کا باڑہ کے اسمگلز وودان گل کے ساتھ کاروباری لین دین تھا۔جو کہ سمگل شدہ کپڑے کا کاروبار کرتے تھے۔جب کہ دیگر غیر قانونی سامان کی سمگلنگ بھی کرتے تھے۔

اور منی لانڈرنگ بھی کرتے اسی سلسلے میں شیخ اکرم 2015 میں ہنڈی کی ایک بڑی رقم لے کر سعودی عرب گیا۔اور وہاں جا کر غائب ہو گیا۔جس کے بعد ودان گل شیخ اکرم کی بیوی اور بچوں کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دیتا رہا۔ 3 سال بعد من پسند تعینات کے بعد 20لاکھ کی ڈیل ہونے کے نتیجے میں ودان گل کا کام آسان ہو گیا اور اس نے تھانہ کوتوالی میں شیخ اکرم ، اس کی بیوی بچوں اور دیگر رشتہ داروں کے خلاف مقدمہ درج کروا دیا۔

(جاری ہے)

پولیس نے ملزم کے جرم کی پاداش میں ا سکی بیوی، بچوں اور رشتہ داروں کو گھر سے اٹھا لیا اور زرائع کا کہنا ہے کہ پولیس نے ملزم شیخ اکرم کی بیوی لبنی اور اس کے گونگے بچوں کو ٹارچر سیل میں رکھا۔جہاں خاتون اور اس کے بھتیجے عبدالمنان پر تفتیشی اہلکار حبیب اللہ کی طرف سے شدید تشدد کیا گیا۔عبدالمنان پر دباؤ ڈالا جا رہا ہے کہ وہ اپنا مکان بیچ کر رقم ادا کرے۔اس سے بھی افسوسناک بات یہ ہے کہ لنبی نامی خاتون پر بچوں کے سامنے برہنہ حالت میں تشدد کیا گیا۔اور ڈی ایس پی عثمان وڑائچ نے اس تمام صورتحال کی خود نگرانی کی۔

متعلقہ عنوان :