واٹر کمیشن کے سربراہ جسٹس (ر) امیر ہانی مسلم لاڑکانہ پہنچ گئے

ہفتہ اپریل 19:33

لاڑکانہ ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 21 اپریل2018ء) سپریم کورٹ کی جانب سے بنائے گئے واٹر کمیشن کے سربراہ جسٹس (ر) امیر ہانی مسلم لاڑکانہ پہنچے جہاں ہفتے کی صبح انہوں نے لاڑکانہ کے قریب گاؤں عمرانی پہنچ کر ڈرینیج سسٹم کے لیے زیر تعمیر آکسیڈیشن پانڈس کا دورہ کیا جہاں پر عمرانی برادری سے تعلق رکھنے والے دیہاتیوں نے شکایت کی کہ انہیں سابق ڈپٹی کمشنر اور ضلعی انتظامیہ کی جانب سے زمینوں کا بہتر معاوضہ نہیں دیا گیا ہے جو زیادتی ہے ہمیں بہتر زمینوں کی بہتر قیمت ملنی چاہیے۔

اسی طرح گاؤں جڑیو چانڈیو کے رہائشی بھی پہنچے جنہوں نے شکایت کی کہ آکسیڈیشن پانڈس کا کام جاری ہے لیکن ہماری زمین کی قیمت 70 سے 80 لاکھ روپے فی ایکڑ ہے لیکن ہمیں اس کے بدلے 7 لاکھ روپے فی ایکڑ دیئے جارہے ہیں۔

(جاری ہے)

انہوں نے مطالبہ کیا کہ زمین کی بہتر قیمت دی جائے۔ واٹر کمیشن کے سربراہ نے دیہاتیوں کو یقین دہانی کروائی کہ ان کے مسائل حل کیے جائیں گے اور کوشش ہے کہ آپ کو زمین کا بہتر معاوضہ مل سکے۔

جس کے بعد واٹر کمیشن سربراہ نے حکومت سندھ کی جانب سے زمینوں کے لیے آئے ہوئے رقم کے متعلق اسسٹنٹ کمشنر سے معلومات لیں، اس موقع پر امیر مسلم ہانی مسلم نے ڈپٹی کمشنر کو ہدایات دیتے ہوئے کہا کہ گندے نالوں کی نکاسی کے لیے زیر تعمیر آکسیڈیشن کا کام جلد مکمل کیا جائے۔ دورے کے دوران کمشنر لاڑکانہ ڈویزن محمد عباس بلوچ، ڈپٹی کمشنر عمران علی، میئر محمد اسلم شیخ، اسسٹنٹ کمشنر نور مصطفیٰ لغاری اور دیگر بھی موجود تھے۔ بعد ازاں صبح کے وقت امیر ہانی مسلم کے بڑے بھائی کے انتقال کے اطلاع پر کراچی روانہ ہوگئے۔

متعلقہ عنوان :