بلوچ عوام کو سیکورٹی فورسز کیساتھ ملکر دہشت گر دوں کی مذموم سوچ کو ناکام بنانا ہو گا،

فضل آغا بلوچستان میں فرقہ وارانہ دہشت گردی کو ہوا دے کر لیبیا اور شام جیسے حالات پیدا کرنے کی ساز ش جاری ہے،ایڈیشنل سیکرٹری جمعیت علماء اسلام

ہفتہ اپریل 23:40

کوئٹہ(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 28 اپریل2018ء) جمعیت علماء اسلام کے مرکزی ایڈیشنل سیکرٹری وسابق گورنر بلوچستان سید فضل آغا گزشتہ روز پیش امام کے بھائی اور ہزارہ برادری کے افراد کی ٹارگٹ کلنگ کی شدید مذمت کر تے ہوئے کہا کہ ماضی کی طرح ایک بار پھر بلوچستان میں ایک سوچے سمجھے منصوبے کے تحت فرقہ وارانہ دہشتگردی کو ہوا دی جا رہی ہے تاکہ یہاں بھی لیبیا اور شام جیسے حالات پیدا ہو سکیں بلوچستان کے عوام کو چاہئے کہ وہ سیکورٹی فورسز کی پشت پنا ہی کر تے ہوئے اسے مذموم سوچ کو ناکام بنانا ہو گا انہوں نے کہا کہ پچھلے کئی دنوں سے کوئٹہ میں ایک بار پھر دہشت گردی اور ٹارگٹ کلنگ شروع ہو چکی ہے امن دشمن عناصر سے کوئٹہ اور صوبے بھر میں قائم امن برداشت نہیں ہوا جس کی وجہ سے انہوں نے ایک بارپھر کوئٹہ کو نشانہ بنانا شروع کر دیا ایسے میں بلوچستان کے عوام کوچا ہئے کہ وہ ملک کے سیکورٹی فورسز کی پشت پنا ہی کر تے ہوئے ایسے مذموم سوچ کو ناکام بنانا ہو گا انہوں نے کہا کہ خارجہ کے ایجنٹس نہیں چا ہتے کہ کوئٹہ میں امن ہو اور یہاں کے برادر اقوام آپس میں امن اور بھائی چارے سے یہاں زندگی گزارے انہوں نے کہا کہ بلوچستان کے عوام کو چا ہئے کہ وہ آپس میں اتحاد واتفاق پیدا کریں تاکہ بلوچستان کولیبا اور شام جیسے حالات پیدا نہ ہو۔