اربوں،کھربوں کے قرضے معاف کرانے والوں پر کڑی تنقید

پی ٹی آئی کے جلسے میں شرکت نہ کرنے پرشہبازشریف کا لاہور کے عوام کو سلام عمران کا ماٹو ’’دھرنا دھرنا کام نہ کرنا ‘‘زرداری کا مقصد ’’مرسوں مرسوں کام نہ کرسوں‘‘

منگل مئی 19:54

اربوں،کھربوں کے قرضے معاف کرانے والوں پر کڑی تنقید
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 01 مئی2018ء) وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے ایوان اقبال میں ’’وزیر اعلی خود روزگار سکیم‘‘ کے تحت چیک تقسیم کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے اربوں ،کھربوں روپے کے قرضے معاف کرانے والوں پر کڑی تنقید کی اور اسے قوم کے ساتھ بڑا جرم قرار دیا جبکہ’’ وزیراعلی خود روزگار سکیم‘‘ کے تحت بلاسود قرضے حاصل کر کے واپس کرنے والوں کو قوم کے عظیم بیٹے اور بیٹیاں کہا-انہوںنے کرپشن میں ڈوبے ہوئے سیاستدانوں کو بھی آڑے ہاتھوں لیا او رکہاکہ یہ سیاستدان آج کل بڑی بڑی شہ سرخیو ںکے ساتھ کرپشن کے خلاف باتیں کرتے ہیں-وزیراعلی نے ایک موقع پر کہاکہ میں ایک گناہگار آدمی ہو ں اور نمود و نمائش کے لئے بات نہیں کرتا ،ہم نے پنجاب کے عوام کی جو حقیر خدمت کی ہے وہ بلاشبہ کسی پر احسان نہیں بلکہ ہماری ذمہ داری ہی-اورنج لائن میٹروٹرین کے منصوبے میں تقریبا 65ارب روپے بچائے گئے ہیں جبکہ گیس پاور پلانٹس کے منصوبوں میں 150ارب روپے کی بچت کی گئی ہی-ہم نے خواب کو حقیقت میں بدلا ہے - شہبازشریف نے پی ٹی آئی کے جلسے میں شرکت نہ کرنے پر لاہور کے عوام کو سلام پیش کرتے ہوئے کہاکہ آپ نے منصوبوں میں تاخیر او ررکاوٹیں کھڑی کرنے پرپی ٹی آئی سے بدلہ لیا ہی-وزیراعلی نے آصف زرداری او رعمران خان کی اپنے اپنے صوبوں میں عوام کی خدمت نہ کرنے پر کڑی تنقید کی او رکہا کہ عمران خان نیازی کا ماٹو ’’دھرنا دھرنا کام نہ کرنا ‘‘جبکہ زرداری کا مقصد ’’مرسوں مرسوں کام نہ کرسوں ‘‘ ہے -وزیراعلی نے اپنے خطاب کے آ خر میں یہ اشعار پڑھے :جب اپنا قافلہ عزم و یقین سے نکلے گا…جہاں سے چاہیں گے رستہ وہیں سے نکلے گا۔

(جاری ہے)

۔۔وطن کی مٹی مجھے ایڑیاں رگڑنے دے…مجھے یقین ہے چشمہ یہیں سے نکلے گا۔