سی پیک کے تحت پاکستان میں سرمایہ کاری کا حجم 2030ء تک 100 ارب ڈالر سے بڑھ جائے گا، اقتصادی ماہرین

بدھ مئی 10:10

سی پیک کے تحت پاکستان میں سرمایہ کاری کا حجم 2030ء تک 100 ارب ڈالر سے بڑھ ..
اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 مئی2018ء) چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے ((سی پیک)) کے تحت پاکستان میں کی جانے والی سرمایہ کاری کا حجم 2030ء تک 100 ارب ڈالر سے بڑھ جائے گا جبکہ قبل ازیں منصوبہ پر کی جانے والی سرمایہ کاری کا تخمینہ 60ارب ڈالر لگایا گیا ہے۔ اقتصادی ماہرین نے کہا ہے کہ سی پیک کے تحت ملک میں تجارتی و صنعتی سرگرمیوں کو فروغ حاصل ہوگا تاہم مقامی صنعت کے تحفظ کے لئے اقدامات کی ضرورت ہے۔

ایوان صنعت و تجارت کراچی کے صدر مفسر عطاء ملک نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ سرمایہ کاری بڑھنے سے جہاں ملک میں کاروباری ، تجارتی اور صنعتی سرگرمیاں بڑھیں وہیں پر مقامی صنعت کو بعض مشکلات بھی پیش آسکتی ہیں جس کے لئے جامع حکمت عملی کے تحت اقدامات کی ضرورت ہے تاکہ غیر ملکی سرمایہ کاروں کے ساتھ ساتھ مقامی سرمایہ کاروں کو بھی مساوی مواقع فراہم کئے جاسکیں۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ سی سی آئی قومی صنعت کی ترقی اور فروغ کے لئے اقدامات کررہا ہے تاہم اس حوالے سے حکومتی سطح پر بھی اقدامات کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ مقامی صنعت کے تحفظ کے لئے سی پیک کے تحت کی جانے والی سرمایہ کاری کے تحت لگنے والی صنعتوں میں مقامی کمپنیوں اور اداروں کی شرکت کو ضروری قرار دیا جائے جس سے بہتر نتائج حاصل ہوں گے۔