نیب نے سندھ میں اہم شخصیات کیخلاف کرپشن کے متعدد کیسز بند کردئیے

صوبائی وزیر کوآپریٹیو اکرام دھاریجو اور وزیر ایکسائز گیان چند اسرانی کیخلاف کرپشن کی تحقیقات اور مقدمہ ختم

جمعہ مئی 14:36

نیب نے سندھ میں اہم شخصیات کیخلاف کرپشن کے متعدد کیسز بند کردئیے
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 مئی2018ء) قومی احتساب بیورونے سندھ میں کرپشن کے متعدد کیسز بند کردئیے ۔نیب ذرائع کے مطابق صوبائی وزیر کوآپریٹیو اکرام دھاریجو اور وزیر ایکسائز گیان چند اسرانی کیخلاف کرپشن کی تحقیقات اور مقدمہ ختم کردیا گیا۔نیب ذرائع کے مطابق مکیش کمار چاؤلہ کے خلاف کیمروں کی خریداری میں کرپشن کا کیس بھی بند کردیا گیا ہے ،ْ صوبائی وزیر قانون ضیاء لنجار کے خلاف اثاثہ جات بنانے کا کیس بھی فائلوں کی نذر ہوگیا۔

(جاری ہے)

ذرائع کے مطابق وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال کے خلاف نیب کی تحقیقات بھی مکمل نہیں ہوسکی جبکہ میر منور تالپور اور اویس مظفر کے خلاف آمدن سے زائد جائیداد اور ناجائز اثاثہ جات کے کیسز بھی بند کردئیے گئے ہیں۔نیب ذرائع کے مطابق سابق وزیر تعلیم پیر مظہرالحق کے خلاف بھی 13 ہزار غیر قانونی بھرتیوں کا کیس بند کردیا گیا ہے ،ْ پیر مظہر پر 5 ارب روپے کی کرپشن کا بھی الزام تھا۔سابق ڈی جی سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی منظور قادر پر 30 ارب کی کرپشن کا الزام تھا تاہم منظور قادر کے خلاف نیب ایک بھی ریفرنس دائر نہ کرسکا۔اس حوالے سے نیب کے ترجمان کا کہنا ہے کہ سندھ میں کرپشن کیسز پر تحقیقات کی گئیں اور ٹھوس شواہد نہ ملنے پر چند کیسز بند کیے گئے۔