خاتون کے ساتھ جنسی زیادتی

متحدہ عرب امارات میں تین عرب نوجوان ایشائی خاتون کے ساتھ جنسی زیادتی کرنے کر جرم میں گرفتار

پیر مئی 16:26

خاتون کے ساتھ جنسی زیادتی
العین (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 مئی2018ء) متحدہ عرب امارات کی ریاست االعین کی ایک گلی میں 30 سالہ خاتون کا گینگ ریپ کرنے کے جُرم میں تین عرب نوجوانوں کو گرفتار کر لیا گیا۔ مزید تفصیلات کے مطابق پولیس نے تحقیقات مکمل ہونے کے بعد 17 سے 25 سال کی عمر کے درمیان تین عرب نوجوانوں کو گرفتار کیا تھا ۔ عدالتی ریکارڈ کے مطابق ان تینوں نوجونواں نے ایک ایشیائی خاتون کو العین کے علاقے کی ایک گلی سے اغواء کیا تھا اور اسے گاڑی میں بیٹھا کر صحرا میں لے گئے تھے جہاں انہوں نے ایک ایک کر کے خاتون کےساتھ جنسی زیادتی تھی ۔

پراسیکوشن کے مطابق جس خاتون کے ساتھ جنسی زیادتی ہوئی ہے وہ العین کے ایک شاپنگ مال میں کام کرتی تھی اور وہ اپنے کام کی جگہ سے ڈیوٹی ختم ہونے پر گھر جانے کے لیے نکلی تھی کہ ان تین عرب نوجوانوں نے اسے زبردستی گاڑی میں بیٹھا لیا اور پھر صحرا میں لے جا کر باری باری زبردستی کا نشانہ بنایا ۔

(جاری ہے)

خاتون نے عدالت کو بتایا کہ تین عرب نوجوانوں میں سے ایک نے خاتون کو زبردستی گاڑی میں بیٹھایا جبکہ ایک نوجوان گاڑی چلا رہا تھا اور تیسرا اردگرد کا دھیان رکھ رہا تھا ۔

خاتون نے عدالت کو بتایا کہ اسنے کافی چیخ وپُکار کرنے کی کوشش کی کہ مجھے چھوڑ دو لیکن اسکی تمام کوشش ناکام گئی ۔ خاتون نے مزید بتایا کہ عرب نوجوانوں نے اسکے ساتھ جنسی زیادتی کرنے کے بعد اسے واپس اسی گلی میں چھوڑ دیا جہاں سے وہ اسے اٹھا کر لے گئے تھے ۔ خاتون گلی سے اپنی مدد آپ کے تحت گھر گئی اور اپنے شوہر کو بتایا کہ کیسے نوجوانوں نے اسے اغواء کیا اور اسکے ساتھ جنسی زیادتی کی ۔

جوڑے نے فوری طور پر پولیس کو شکایت درج کروائی ۔ تاہم خاتون نے پولیس کو بتایا کہ اسکو مجرموں کے چہرے یاد نہیں ہیں کیونکہ گلی میں کافی اندھیرا تھا ۔ پولیس نے خاتون کو اغواء کرنے والے نوجواںوں کی گلی کے سی سی ٹی وی کیمروں سے فوٹیج حاصل کر لی ہے ۔ پولیس نے عرب نوجوانوں کو گرفتار کر لیا ہے اور پراسیکیوشن کے حوالے کر دیا گیا ہے ۔ تاہم عدالت نے کیس کا کوئی فیصلہ نہیں سنایا ۔ کیس کا فیصلہ اگلی سنوائی تک ملتوی کر دیا گیا ہے ۔