رمضان غم خواری، بخشش ،معافی اورسخاوت کا مہینہ ہے ‘مولانا سید عبد الخبیر آزاد

ماہ مبارک میںتقویٰ اخلاص کے ساتھ زکوٰة صدقات و عطیات کی مدات میں اللہ کی راہ میںدل کھو ل کر خرچ کرنا چاہیے

جمعہ مئی 17:39

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 مئی2018ء) تاریخی عالمگیری باد شاہی مسجد کے خطیب وچیئر مین مجلس علماء پاکستان مولانا سید عبد الخبیر آزاد نے کہا ہے کہ اللہ تعالیٰ نے ہمیں یہ رمضان المبارک کا ماہ مبارک عطا ء فرمایا یہ ماہ مبارک بخشش معافی سخاوت اور ایک دوسرے کی غم خواری کا مہینہ ہے ،روزے کا مقصد تقویٰ ہے رمضان کا پہلا عشرہ رحمت کاہے، دوسرا مغفرت کا تیسرا عشرہ جہنم کی آگ سے خلاصی کا ہے، اس ماہ میں اللہ تعالیٰ کی رحمت جوش میں ہوتی ہے ،یہ اس ماہ میں تقویٰ اخلاص و تقویٰ کے ساتھ ساتھ زکواة صدقات و عطیات کی مدات میں اللہ کی راہ میں دل کھول کر خرچ کیجئے ۔

جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے انہوںنے کہاکہ ماہ رمضان سراسرخیر وبرکت رحمت مغفرت اور جہنم سے خلاصی و سلامتی حاصل کرنے اور اللہ کو راضی کرنے کا مہینہ ہے ،حضرت ا بوہریرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ روایت فرماتے ہیں کہ آپ صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا کہ میری امت کو رمضان شریف کے بارے میں پانچ چیزیں مخصوص طور پر دی گئی ہیں جو پہلی امتوں کو نہیں ملی ہیں۔

(جاری ہے)

ان کے منہ کی بدبو اللہ تعالیٰ کے نزدیک مشک سے زیادہ پسندیدہ ہے۔ان کیلئے دریا کی مچھلیاں تک دعا کرتی ہیں،اور افطار کے وقت تک کرتی رہتی ہیں۔جنت ہر روز ان کیلئے آراستہ کی جاتی ہے،پھر حق تعالیٰ شانہ فرماتے ہیں کہ قریب ہے کہ میرے نیک بندی((دنیا کی) مشقتیں اپنے اوپر سے پھینک کرتیری طرف آویں۔اس میں سرکش شیاطین قید کر دیئے جاتے ہیں کہ وہ رمضان میں ان برائیوں کی طرف نہیں پہنچ سکتے جن کی طرف غیر رمضان میں پہنچ سکتے ہیں۔رمضان کی آخری رات میں روزہ داروں کیلئے مغفرت کی جاتی ہے، صحابہ ؓ نے عرض کیا کہ یہ شب مغفرت شب قدر ہے فرمایا نہیں بلکہ دستور یہ ہے کہ مزدور کو کام ختم ہونے کے وقت مزدوری دے دی جاتی ہے،اللہ تعالیٰ ہمیں عمل کی تو فیق عطا فرمائے ۔