کمشنر کراچی کی زیر صدارت اجلاس، غیر قانونی انٹر سٹی بس اڈوں کی شہر سے باہر منتقلی کے حوالے سے اقدامات

منگل مئی 16:24

کراچی ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 29 مئی2018ء) کمشنر کراچی اعجاز احمد خان نے کہا کہ عید الفطر کے موقع پرانٹر سٹی بسوں میں سرکاری کرایہ نامہ پر سختی سے عمل کیا جائے، زائد کرایہ لینے والے ٹرانسپورٹرز کے خلاف کارروائی کی جائے، مہم 20 رمضان سے شروع ہو گی ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے منگل کے روز اپنے دفتر میں منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔

اجلاس میں انٹر سٹی بس ٹرمنلز کو بہتر بنانے اور بس اڈوں کی شہر سے باہر منتقلی کے اقدامات کا بھی جائزہ لیا گیا۔ اجلاس نے شہر میں انٹر سٹی بسوں کے غیر قانونی اڈوں کی وجہ سے پیداہونے والے ٹریفک مسائل اور ان کے حل کے اقدامات کا تفصیلی جائزہ لیا ۔ اجلاس کو یوسف گوٹھ اور الآصف اسکوائر پرقائم بس ٹرمنلز کوبہتر بنانے اور ان میںمسافروں کے لئے سہولتیں فراہم کر نے کے لئے کی جانے والی کوششوں کے بارے میں بریفنگ دی گئی ۔

(جاری ہے)

ملیر میں بس ٹرمنل بنانے کے مجوزہ منصوبہ پراقدامات کا بھی جائزہ لیا گیا۔ کمشنر نے کہا کہ انڑ سٹی بس ٹرمنلز پر سہولتوں کو بہتر بنایا جا رہا ہے شہر سے باہر معیاری انٹر سٹی بس ٹرمنلز قائم کر نے سے مسافروں کو سہولت ملے گی اور شہر کے اندر بس اڈوں کی وجہ سے پیداہونے والے ٹریفک مسائل ختم ہوں گے۔فیصلہ کیا گیا کہ مجوزہ منصوبوں پر ترجیحی اقدامات کیے جائیں گے اور شہر کے مختلف علاقوں میں مصروف شاہراہوں پر قائم غیر قانونی بس اڈے بتدریج منتقل کئے جائیں گے ،اجلاس میں ڈی آئی جی ٹریفک پولیس عمران یعقوب منہاس ،ایڈیشنل کمشنر کراچی محمد علی شاہ، تمام ڈپٹی کمشنرز ، محکمہ ٹرانسپورٹ ، پولیس ،صوبائی ٹرانسپورٹ اتھارٹی اور ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی کے افسران،اسسٹنٹ کمشنرجنرل اعجاز حسین رند، ٹریفک انجینئر نگ بیورو کے سینئر ڈائریکٹر قاضی عبدالقا درور دیگر بھی مو جو د تھے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ انٹر سٹی بسوں کے مسافروں سے زائد کرایہ کے خلاف مہم 20رمضان المبارک سے شروع کی جائے گی۔

متعلقہ ڈپٹی کمشنرز کرایے چیک کرنے اور زائد کرایہ کی شکایت کے ازالے کے لئے ٹیمیں بنائیں گے جن میں ضلعی انتظامیہ پولیس اورصوبائی ٹرانسپورٹ اتھارٹی اور ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی کے افسران شامل ہوں گے ۔ ڈپٹی کمشنرز کی نگرانی میں ٹیمیں کام کریں گی ٹیمیں بسوں کے ٹکٹ دفاتر اور بس ٹرمنلز پر انٹرسٹی بسوں کے کرایے چیک کریں گی۔مسافروں کی زاید کرایہ سے متعلق شکایت سننے اور اس کے ازالے کے لئے شکائتی ڈیسک قائم کیے جائیں گے ۔