پاکستان بیلا روس کیساتھ صنعت ، تجارت اور زراعت میں اضافے کا خواہش مند ہے،صدر ممنون حسین

نامزد سفیر بیلاروس میں اپنی ذمہ داریاں سنبھالنے کے بعد تاجروں اور صنعت کاروں کے دوطرفہ دوروں میں اضافے کا اہتمام کریں، دونوں ممالک کے متعلقہ لوگ تعاون کے مزید شعبے تلاش کرسکیں گے،پاکستان میں غیر ملکی سرمایہ کاروں کے لیے نہایت دوستانہ ماحول ، انتہائی لچکدار اور بہترین قوانین متعارف کرائے گئے ہیں، یہ سرمایہ کاروں اور پاکستان دونوں کے لیے مفید ثابت ہوسکتے ہیں صدر مملکت ممنون حسین کی بیلاروس کیلئے پاکستان کی نامزد سفیر لینا سلیم معظم اور یونان کے سبکدوش ہونیوالے سفیر دیمی ٹریوس زرئے ٹس سے گفتگو

پیر جون 19:01

پاکستان بیلا روس کیساتھ صنعت ، تجارت اور زراعت میں اضافے کا خواہش مند ..
سلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 جون2018ء) صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ پاکستان بیلا روس کے ساتھ صنعت ، تجارت اور زراعت کے شعبو ں میں اضافے کا خواہش مند ہے ۔ اس سلسلے میں دونوں ملکوں کے درمیان تعاون کے وسیع امکانات موجود ہیں ۔ صدر مملکت نے یہ بات بیلاروس کے لیے پاکستان کی نامزد سفیر لینا سلیم معظم سے بات چیت کرتے ہوئے کہی ۔ اس موقع پر دیگر اعلی حکام بھی موجود تھے ۔

صدر مملکت نے کہا کہ پاکستان بیلاروس کے ساتھ تعلقات کو غیر معمولی اہمیت دیتا ہے ۔ دونوں ملکوں کے درمیان انتہائی گہرے دوستانہ مراسم ہیں اور دونوں ملک صنعت ، تجارت اور زراعت سمیت بہت سے شعبوں میں دوطرفہ تعاون میں اضافہ کرسکتے ہیں ۔انھوں نے نامزد سفیر کو ہدایت کی کہ وہ دوطرفہ دلچسپی کے تمام شعبوں میں تعاون میں اضافے پر فوری توجہ دیں ۔

(جاری ہے)

صدر مملکت نے کہا کہ نامزد سفیر بیلاروس میں اپنی ذمہ داریاں سنبھالنے کے بعد تاجروں اور صنعت کاروں کے دوطرفہ دوروں میں اضافے کا اہتمام کریں اس سے دونوں ممالک کے متعلقہ لوگ تعاون کے مزید شعبے تلاش کرسکیں گے ۔ صدر مملکت نے کہا کہ بیلاروس کے صدر لوکا شینکو پاکستان کے بہترین دوست ہیں اور وہ دونوں ملکوں کے درمیان تعاون میں اضافے کے لیے پرجوش ہیں ۔

انھوں نے کہا کہ پاکستان بھی بیلاروس کے ساتھ مختلف شعبوں میں تعاون میں اضافے کے لیے پرجوش ہے۔ دوسری طرف صدر مملکت ممنون حسین نے کہا ہے کہ پاکستان میں غیر ملکی سرمایہ کاروں کے لیے نہایت دوستانہ ماحول ، انتہائی لچکدار اور بہترین قوانین متعارف کرائے گئے ہیں جو سرمایہ کاروں اور پاکستان دونوں کے لیے مفید ثابت ہوسکتے ہیں۔۔صدر مملکت نے یہ بات یونان کے سبکدوش ہونے والے سفیر دیمی ٹریوس زرئے ٹس سے بات چیت کرتے ہوئے کہی۔

اس موقع پر دیگر اعلی حکام بھی موجود تھے۔۔صدر مملکت نے کہا کہ پاکستان کے یونان کے ساتھ انتہائی گہرے دوطرفہ تعلقات ہیں جن میں مزید گہرائی پیدا کرنے کے لیے سبک دوش ہونے والے سفیر نے بہت محنت سے کام کیا ہے جس پر وہ مبارک باد کے مستحق ہیں ۔ انھوں نے کہاکہ دونوں ممالک صنعت ، تجارت اور مواصولات کے شعبوں میں تعاون کی نئی راہیں تلاش کرسکتے ہیں ۔

۔ انھوں نے توقع ظاہر کی کہ یونان کے صنعت کار ، تاجر اور سرمایہ کار پاکستان میں سرمایہ کاری کے مواقع سے زیادہ سے زیادہ فائدہ اٹھائیں گے ۔ انھوں نے کہا کہ پاک چین اقتصادی راہداری اس سلسلے میں انتہائی مناسب موقع فراہم کر رہی ہے ۔انھوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے تاجروں اور صنعت کاروں کو ویزا کی زیادہ سے زیادہ سہولتیں میسر آنی چاہیں تاکہ یہ لوگ باہمی تعاون میں مزید مواقع تلاش کرسکیں ۔سبکدوش ہونے والے سفیر دیمی ٹریوس زرئے ٹس نے پرجوش مہمانوازی پر صدر مملکت ، حکومت اور عوام کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ پاکستان میں قیام کی خوشگوار یادیں ان کے ذہن میں ہمیشہ تازہ رہیں گی ۔