ون ویلنگ کے مرتکب نوجوانوں کو عید جیل میں گزارنا پڑے گی،سٹی ٹریفک پولیس

والدین اپنے بچوں کو ون ویلنگ جیسے خطرناک فعل سے منع کریں

بدھ جون 21:04

راولپنڈی06جون(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 جون2018ء) سٹی ٹریفک پولیس کا کہنا ہے کہ شاہراوں پر ون ویلنگ کے مرتکب نوجوانوں کو عید جیل میں گزارنا پڑے گی ۔والدین سے گزارش ہے کہ اپنے بچوں پرنظر رکھیں تاکہ انہیں کسی پریشانی کا سامانا نہ کرنا پڑے۔ سٹی ٹریفک پولیس کے ترجمان کا کہنا ہے کہ اس ضمن میں ون ویلرز کے خلاف ون ویلنگ کرنے کے جرم میں سیکشن 99/Aکے تحت مقدمہ درج کیا جاتا ہے ۔

والدین ذمہ داری کا مظاہرہ کریں اور اپنے بچوں کو سحری کے بعد گھر سے موٹر سائیکل لے کر نہ نکلنے دیں ورنہ ون ویلنگ کے مرتکب بچوں کو عید جیل میں گزارنا پڑے گی۔

(جاری ہے)

اس حوالے سے چیف ٹریفک آفیسر راولپنڈی ایس ایس پی بلال افتخار نے بتایا کہ رمضان المبارک کے دوران بلخصوص سحری کے بعد مری روڈ ، فلائی اوورز، پشاور روڈ ، مال روڈ ، ایئر پورٹ روڈ اور دیگر شاہراہوں پر ون ویلنگ کے خلاف قانونی کاروائی کرنے کے لئے ٹریفک پولیس اور ضلع پولیس کا مشترکہ خصوصی سکواڈ مختلف مقامات پر تعینات ہے جو ون ویلنگ کے خلاف موثر کاروائی عمل میں لا رہا ہے انہوں نے بتایاکہ ون ویلنگ قانوناًً جرم ہے اور قیمتی زندگی کے ساتھ خطرناک کھیل بھی اس لئے ون ویلنگ پر مکمل پابندی ہے اس حوالے سے ٹریفک پولیس کی جانب سے ون ویلنگ کے خلاف سخت سے سخت قانونی کاروائیاں جاری ہیں انہوںنے کہا کہ والدین بھی اپنا فرض ادا کریں اور حقائق کو مدنظر رکھتے ہوئے اپنے بچوں کو ون ویلنگ جیسے خطرناک فعل سے خود بھی منع کریں اور سمجھائیں تا کہ ان کی قیمتی جانوں کو لاپرواہی کی وجہ سے روڈ حادثات کا شکار ہونے سے بچا یا جا سکے جو عمر بھر کی معذوری اور موت کا سبب ہیں انہوںنے کہا کہ بصورت دیگر قانونی کاروائی کا سامنا کرنا پڑے گاجو والدین کے لیئے بھی باعثِ پریشانی وتکلیف دہ ہو گا۔