لڑکیوں کے اغوااورجنسی زیادتی میں ملوث ملزم احاطہ عدالت سے فرار

جمعہ جون 19:38

نوشہرہ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 08 جون2018ء) لڑکیوں کو شادی کا جھانسہ دے کر اغوا اور اغواء کے بعد جنسی تشدد کا نشانہ بنانے والے ملزم کی عدالت سے ضمانت قبل از گرفتاری خارج ہوتے ہی ملزم احاطہ عدالت سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا۔ تفصیلات کے مطابق نوشہرہ کے علاقہ زیارت کاکاصاحب کے موضع سپین کانے کا رہائشی نوجوان شجاعت ولد محترم شاہ جو لڑکیوں کو شادی کا جھانسہ دے کر ان کو اغواء اور بعد میں جنسی تشدد کا نشانہ بناتا کے خلاف عباس خان نامی شخص نے تھانہ نوشہرہ کینٹ میں زنا بالجبر اور اغوا کا مقدمہ درج تھا۔

(جاری ہے)

اس میں اس کا ساتھی طیب پہلے ہی گرفتار ہوچکا ہے جبکہ شجاعت ولد محترم شاہ نے ایڈیشنل سیشن جج سمیرا ولی کی عدالت سے ضمانت قبل از گرفتاری حاصل کی تھی۔ چنانچہ ملزم پیش ہوا۔ فاضل جج نے جوں ہی اس کی درخواست خارج کی ملزم احاطہ عدالت سے فرار ہوگیا۔ احاطہ عدالت سے فرار ہونے پر ایڈیشنل سیشن جج سمیرا ولی پولیس پر برہم ہوگئی اور ان کے خلاف تحقیقات کا حکم دے دیا واضح رہے کہ ملزم کے خلاف اٹھارہ مئی کوتھانہ نوشہرہ کینٹ میں سید جمال کی مدعیت میںمقدمہ درج ہوا جس میں دوجواں سال لڑکیوں زرقہ، اور ھما کو اغوا کرنے اور زنا بالجبر کا مقدمہ درج کیاگیا تھا۔