ْ خواجہ حارث کی علیحدگی ،

نواز شریف کے خلاف العزیزیہ ریفرنس کی سماعت کل تک کیلئے ملتوی

پیر جون 13:01

ْ خواجہ حارث کی علیحدگی ،
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 جون2018ء) پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد سابق وزیراعظم نواز شریف کے خلاف العزیزیہ اسٹیل ملز ریفرنس کی سماعت وکیل خواجہ حارث کی جانب سے وکالت نامہ واپس لینے کی وجہ سے کل منگل تک کے لیے ملتوی کردی گئی۔ پیر کو احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے نواز شریف کے خلاف نیب ریفرنس کی سماعت کی۔سابق وزیراعظم نواز شریف احتساب عدالت میں پیش ہوئے۔

(جاری ہے)

سماعت کے آغاز پر خواجہ حارث نے اپنا وکالت نامہ واپس لینے کی درخواست کرتے ہوئے عدالت کو تحریری طور پر آگاہ کیا کہ سپریم کورٹ نے گزشتہ روز نواز شریف کے خلاف تینوں نیب ریفرنسز کا ٹرائل 6 ہفتوں میں مکمل کرنے سے متعلق ان کے موقف کو تسلیم نہیں کیا اور یہ ڈکٹیشن بھی دی کہ ایک ماہ میں ریفرنسز کا فیصلہ کریں، لہذا ان حالات میں وہ کام جاری نہیں رکھ سکتے۔اس کے بعد خواجہ حارث احتساب عدالت سے روانہ ہوگئے۔اس موقع پر جج محمد بشیر نے نواز شریف سے استفسار کیا کہ آپ نیا وکیل رکھیں گے یا خواجہ حارث کو راضی کرلیں گی'جس پر سابق وزیراعظم نے جواب دیا کہ مجھے مشورے کے لیے کچھ دن دیے جائیں۔جس کے بعد احتساب عدالت نے العزیزیہ ریفرنس کی سماعت منگل تک کے لیے ملتوی کردی۔