سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں آبادی سے متعلق درخواست کی سماعت

وفاقی اور چاروں حکومتوں سے جامع جواب طلب کر لیا گیا بتایا جائے آبادی کی روک تھام سے متعلق کیا اقدامات اٹھائے گئی بتایا جائے پالولیشن پالیسی کے کیا اثرات مرتب ہوئی ، عدالت

جمعہ جون 21:50

سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں آبادی سے متعلق درخواست کی سماعت
کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 جون2018ء) سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی کی سربراہی میں لارجر بینچ نے آبادی سے متعلق درخواست کی سماعت کے موقع پرسپریم کورٹ نے وفاقی اور چاروں حکومتوں سے جامع جواب طلب کر لیا ،جمعہ کو سماعت کے موقع پرعدالت نے استفسار کیا کہ بتایا جائے آبادی کی روک تھام سے متعلق کیا اقدامات اٹھائے گئی بتایا جائے پالولیشن پالیسی کے کیا اثرات مرتب ہوئی سپریم کورٹ نے سماعت منگل کے لیے اسلام آباد میں مقرر کردی ،،چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ وسائل دستیاب نہیں, آبادی تیزی سے بڑھ رہی ہی, وفاقی اور صوبوں حکومت کو آبادی کنٹرول سے متعلق مربوط پالیسی مرتب کرنا ہوگی, دو ماہ قبل اٹارنی جنرل کو کہا تھا اقدامات سے آگاہ کریں,,پنجاب حکومت کے وکیل نے جواب دیا کہ 2002 میں وفاقی حکومت نے آبادی کنٹرول پالیسی بنائی, 2017 میں پنجاب حکومت نے اپنی صوبائی پالیسی مرتب کی, صوبائی پالیسی بنانے سے کافی بہتر نتائج ملی, 1998 میں پنجاب کی آبادی 2,6 جبکہ 2017 میں 2,1 فیصد ریکارڈ ہوئی۔

#