تحریک انصاف کے نامزد امیدوار سجاد مہنیس زیادتی، قتل اور دیگر وارداتوں میں ملوث نکلے

پی ٹی آئی نے سجاد مہنیس کو ابرار الحق کی سفارش پر ٹکٹ دیا، میڈیا رپورٹ

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان پیر جون 16:29

تحریک انصاف کے نامزد امیدوار سجاد مہنیس زیادتی، قتل اور دیگر وارداتوں ..
فیصل آباد(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔25جون 2018ء) پاکستان تحریک انصاف کے الیکشن 2018کے لیے نامزد امیدوار سجاد مہنیس قتل اور دیگر وارداتوں میں ملوث نکلے۔تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف میں ٹکٹوں کی تقسیم کا معاملہ سنگین صورتحال اختیار کر گیا ہے۔۔۔پی ٹی آئی کارکنان کا کہنا ہے کہ تحریک انصاف کی قیادت نے نظریاتی کارکنان کے بجائے الیکٹیبلز کو اہمیت دی ہے۔

جب کہ اس بات ٹکٹوں کی تقسیم کے حوالے سے سفارشی پروگرام بھی چل رہا ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستان تحریک انصاف سیاسی رہنماؤں کو ٹکٹ دیتے ہوئے ان کا ریکارڈ نہیں چیک کر رہی۔یہی وجہ ہے ٹکٹوں کے لیے نامزد امیدوار سنگین جرائم میں ملوث نکلے ہیں۔۔نجی ٹی وی چینل کی ایک رپورٹ کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے الیکشن 2018کے لیے نامزد امیدوار سجاد مہنیس قتل اور دیگر وارداتوں میں ملوث نکلے ہیں۔

(جاری ہے)

جب کہ سجاد مہنیس پر زیادتی کے مقدمات بھی درج ہیں۔سجاد مہنیس پی پی 50سے ایم پی اے کے امیدوار ہیں۔سجاد مہنیس پر لاہور کے تھانے گجر پورہ میں تین افراد کے قتل کا مقدمہ درج ہے۔جب کہ پی ٹی آئی نے ابرار الحق کی سفارش پر سجاد مہنیس کو ٹکٹ دیا تھا۔ کچھ پی ٹی آئی رہنماؤں کا کہنا ہے کہ سجاد مہنیس کو پارٹی ٹکٹ جاری کرنے پر تحریک انصاف کی ساکھ مجروع ہو گی۔

یاد رہے اس سے پہلے تحریک انصاف کے کارکنان غیر منصفانہ تقسیم پر عمران خان کی رہائش گاہ بنی گالا کے باہر بھی احتاج کرتے رہے ہیں۔جب کہ مختلف علاقوں سے آئے کارکنان نے بنی گالا میں کئی روز تک دھرنا دئیے رکھا۔جب کہ تحریک انصاف میں ٹکٹوں کی غیرمنصفانہ تقسیم پربعض کارکنان کااحتجاج کا سلسلہ ابھی بھی جاری ہے۔آج پی ٹی آئی ترجمان فواد چوہدری کی پریس کانفرنس میں ایک اور خاتون نے ٹکٹ نہ ملنے پرشدید احتجاج کیا،خاتون کے احتجاج کے دوران فواد چوہدری کے پسینے چھوٹ گئے،فواد چوہدری پسینہ صاف کرتے رہے،خاتون رکن فاطمہ نے کہا کہ فواد چوہدری آپ ہمیں نہیں جانتے ،ہم پرانے ورکرہیں،نظریاتی کارکنان کونظر انداز کیا گیا ہے۔