سعودی ولی عہد اور اسرائیلی وزیر اعظم مابین اردن کے شاہی پیلس میں خفیہ ملاقات

اردنی شاہ عبداللہ دوئم نے مذاکرات میں ثالث کا کردار ادا کیا، سفارتی روابط نہ ہونے کے باوجود دونوں ممالک مابین خفیہ روابط ہیں، اسرائیلی ذرائع ابلاغ کا دعویٰ

منگل جون 14:21

سعودی ولی عہد اور اسرائیلی وزیر اعظم مابین اردن کے شاہی پیلس میں خفیہ ..
مقبوضہ بیت المقدس(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 جون2018ء) اسرائیلی ذرائع ابلاغ نے دعویٰ کیا ہے کہ سعودی ولی عہد اور اسرائیلی وزیر اعظم مابین اردن کے شاہی پیلس میں خفیہ ملاقات وقوع پذیر ہوئی، اردنی شاہ عبداللہ دوئم نے مذاکرات میں ثالث کا کردار ادا کیا، سفارتی روابط نہ ہونے کے باوجود دونوں ممالک مابین خفیہ روابط ہیں۔ اسرائیلی ذرائع ابلاغ نے اسرائیلی روزنامہ ماریو کے حوالے سے کہا ہے کہ اسرائیل کے وزیر اعظم بنیامین نیتان یاہو اور سعودی عرب کے ولی عہد پرنس محمد بن سلمان نے اردن میں خفیہ ملاقات کی۔

اسرائیل کے روزنامہ ماریو میں شائع شدہ خبر میں دعوی کیا گیا ہے کہ نیتان یاہو اور سلمان کے درمیان اردن کے دارالحکومت عمان کے شاہی پیلس میں ملاقات ہوئی۔۔مذاکرات ، وائٹ ہاوس کے مشیر اول جیرڈ کشنر اور امریکہ کے مشرق وسطی کے سفیر جیسن گرین بلاٹ کے گذشتہ ہفتے دورہ عمان کے دوران کئے گئے۔

(جاری ہے)

خبر کے مطابق اردن کے شاہ عبداللہ دوئم نے مذاکرات میں ثالث کا کردار ادا کیا۔

خبر میں کہا گیا ہے کہ دونوں ملکوں کے درمیان سفارتی تعلقات موجود نہیں ہیں تاہم یقین کے ساتھ کہا جا سکتا ہے کہ دونوں ملکوں کے درمیان خفیہ رابطہ موجود ہے۔واضح رہے کہ سعودی ولی عہد پرنس محمد بن سلمان نے امریکہ میں 'دی اٹلانٹک ' جریدے کے لئے اپنے انٹرویو میں بھی کہا تھا کہ وہ اس بات پر یقین رکھتے ہیں کہ فلسطینیوں اور اسرائیلیوں کو اپنی زمین کا مالک بننے کا حق حاصل ہے لیکن امن سمجھوتے کا طے پانا ضروری ہے۔