امریکہ نے پاکستان کے 300 ملین ڈالرز کے سیکیورٹی فنڈز کی بحالی پر غور شروع کر دیا

ٹرمپ انتظامیہ پاکستان کی نئی حکومت کے ساتھ تعلقات معمول پر لانے کی خواہاں ہے ،ْامریکی اخبار

جمعرات ستمبر 13:31

امریکہ نے پاکستان کے 300 ملین ڈالرز کے سیکیورٹی فنڈز کی بحالی پر غور ..
واشنگٹن(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 ستمبر2018ء) ٹرمپ انتظامیہ نے پاکستان کے روکے گئے سیکیورٹی فنڈز بحال کرنے پر غور شروع کردیا۔امریکی اخبار نے دعویٰ کیا کہ ٹرمپ انتظامیہ پاکستان کی نئی حکومت کے ساتھ تعلقات معمول پر لانے کی خواہاں ہے اور اس سلسلے میں اس نے پاکستان کے روکے گئے فنڈز دوبارہ بحال کرنے پر بھی غور شروع کیا ہے۔اخبار نے کہا کہ عمران خان کے اقتدار میں آنے سے پاک امریکہ تعلقات کو دوبارہ استوار کرنے کا نیا دور کھلا ہے اور سیکیورٹی فنڈز کی بحالی تعلقات دوبارہ استوار کرنے کے اقدامات کا حصہ ہے۔

(جاری ہے)

یاد رہے کہ پینٹاگون نے پاکستان کے 300 ملین ڈالر فنڈز 2 ستمبر کو روکنے کا اعلان کیا تھا جس کے بعد 5 ستمبر کو امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپئو نے پاکستان کا دورہ کیا جس میں انہوں نے سیاسی و عسکری قیادت سے ملاقاتیں بھی کیں۔امریکی اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ وائٹ ہائوس انتظامیہ میں کشمکش جاری ہے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جارحانہ پالیسی پر ازسر نو غور کیا جائے جبکہ پاکستان میں سابق امریکی سفیر کا خیال ہے کہ پاکستان کے فنڈز روکنا ٹرمپ انتظامیہ کا خوفناک فیصلہ تھا۔اخبار کی رپورٹ میں کہا گیا کہ پاک امریکہ تعلقات میں عمران خان کلیدی اہمیت کے حامل ہوسکتے ہیں۔