وزیراعظم نے کہا ہے کہ وہ خود کرکٹ کو ٹھیک کریں گے، کنول شوزاب

کرکٹ کو ٹھیک کرنا وزیراعظم کا کام نہیں ہے، سپورٹس تجزیہ کار فخرعالم

Usman Khadim Kamboh عثمان خادم کمبوہ پیر جون 21:42

وزیراعظم نے کہا ہے کہ وہ خود کرکٹ کو ٹھیک کریں گے، کنول شوزاب
لاہور (اردوپوائنٹ اخبار تازہ ترین۔ 17جون2019) پاکستان تحریکِ انصاف کے رہنما کنول شوزاب نے کہا ہے کہ وزیراعظم نے کہا ہے کہ اب وہ خود کرکٹ کو ٹھیک کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ سمجھ نہیں آتی کہ قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے وزیراعظم کی پہلے بیٹنگ کرنے والی بات کیوں نہیں مانی۔ کنول شوزاب نے کہا کہ کرکٹ کے پورے ڈھانچے میں اصلاحات کی ضرورت ہے۔ اس بات پر جواب دیتے ہوئے کہا کہ سپورٹس تجزیہ کار فخرعالم نے کہا ہے کہ کرکٹ کو ٹھیک کرنا وزیراعظم کا کام نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے کھیل کے میدان ختم ہو چکے ہیں اس لیے کھیلوں کے حالات میں ٹھیک نہیں ہیں۔ فخرعالم نے کہا کہ اب پاکستانی ٹیم کا ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں جانا بہت مشکل ہے۔ اس حوالے سے بات کرتے ہوئے پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما طارق فضل چوہدری نے کہا کہ شکست تسلیم کر کے نئے جذبے سے آگے بڑھنا ہو گا۔

(جاری ہے)

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان صرف کرکٹ ہی نہیں بلکہ ہاکی اور سکواش مین بھی پیچھے ہے۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما ناصر حسین شاہ نے کہا کہ کل کے میچ سے توقعات زیادہ تھیں لیکن مایوسی ہوئی البتہ ہمیں کھلاڑیوں کی حوصلہ شکنی نہیں کرنی چاہیے۔ ناہوں نے کہا کہ ہماری ٹیم اتنی بھی گئی گزری نہیں ہے، ہمیں اب اگلے میچوں کی طرف دیکھنا ہو گا۔ یاد رہے کہ آئی سی سی ورلڈ کپ 2019ءکے 22ویں میچ میں بھارت نے پاکستان کو ڈک ورتھ لوئیس میتھڈ کے تحت 89رنز سے شکست دیدی ہے ۔

بھارت کے 337رنز کے ہدف کے تعاقب میں پاکستانی اوپنرز ٹیم کو عمدہ آغاز نہ دے سکے اور امام الحق 7رنز بنا کر شنکر کی گیند پر ایل بی ڈبلیو آﺅٹ ہوئے ،دوسری وکٹ پر بابر اعظم اور فخر زمان نے 104 رنز کی شراکت قائم کی،اس دوران پاکستانی اوپنر نے اس دوران اپنی نصف سنچری مکمل کی۔ 337 رنز کے بڑے ہدف کے تعاقب میں117 کے سکور پر بابر اعظم 48 رنز بناکر کلدیپ یادیو کی گیند پر بولڈ ہوگئے۔

126 کے سکور پر اوپنر فخر زمان 62رنز بناکر آﺅٹ ہوگئے، ان کی وکٹ بھی کلدیپ یادیو کے حصے میں آئی۔129کے سکور پر 26ویں اوورز میں پانڈیا نے لگاتار دو گیندوں پر محمد حفیظ اور شعیب ملک جیسے سینئر بیٹسمینوں کی وکٹیں اپنے نام کرلیں۔عماد وسیم اور کپتان سرفراز احمد نے انڈر پریشر ٹیم کا سکور آگے بڑھانے کی کوشش کی، کپتان سرفراز احمد اس موقع پر شدید دباﺅمیں نظر آئے اور 30 گیندوں پر صرف 12 رنز بناکر آﺅٹ ہوگئے۔

بارش رکنے پر پاکستان کو جیت کےلئے ڈک ورتھ لوئیس میتھڈ کے تحت302رنز کا ہدف ملا تاہم سرفراز الیون مقررہ 40اوور ز میں 6وکٹوں کے نقصان پر 212رنز بنا سکی ۔ اس سے قبل مانچسٹر کے اولڈ ٹریفورڈ گراﺅنڈ میں قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے ٹاس جیت کر فیلڈنگ کا فیصلہ کیا ،بھارت کی جانب سے روہت شرما اور کے ایل راہول نے اننگز کا آغاز کیا۔دونوں بلے بازوں نے فاسٹ باﺅلر محمد عامر کےخلاف محتاط انداز اپنایا لیکن حسن علی کے خلاف جارحانہ کھیلپیش کیا اور پہلی وکٹ کی شراکت میں 131 رنز بنائے،روہت شرما نے 2 چھکوں اور 6 چوکوں کی مدد سے 34 گیندوں پر اپنی نصف سنچری مکمل کی جبکہ راہول نے 69 گیندوں پر نصف سنچری بنائی جس میں ایک چھکا اور تین چوکے بھی شامل تھے،بھارت کا سکور 136 تک پہنچا تو راہول وہاب ریاض کی گیند پر کیچ آﺅٹ ہوگئے، انہوں نے 78 گیندوں پر 57 رنز کی اننگز کھیلی،دوسری وکٹ پر روہت شرما اور کپتان ویرات کوہلی نے سکو ر آگے بڑھانا شروع کیا ، دوسری وکٹ پر روہت شرما اور کپتان ویرات کوہلی نے 98 رنز کی پارٹنرشپ بنائی اور شرما 85 گیندوں پر 3 چھکوں اور 9 چوکوں کی مدد سے اپنے کیرئیر کی 24ویں سنچریبنانے میں کامیاب رہے،بھارت کا مجموعی سکور 234 تک پہنچا تو روہت شرما 140 رنز بنا کر حسن علی کا شکار بنے۔

ہارک پانڈیا26رنز بنا کر محمد عامر کا شکار بنے ، دھونی بڑی اننگز نہ کھیل سکے اور صرف 1رن بنا کر عامر کی دوسری و کٹ بنے ،میچ میں46.4اوورز میں بھارت نے 4 وکٹ پر 305رنز بنائے تھے کہ بارش ہوگئی،تھوڑے وقفے کے بعد میچ دوبارہ شروع ہوا۔48 ویں اوورز میں کپتان ویرات کوہلی 77رنز بناکر محمد عامر کا تیسرا شکار بن گئے،انہوں نے میچ میں7 چوکے لگائے۔پاکستان کی طرف سے محمد عامر نے 10اوورز میں 47رنز کے عوض 3،وہاب ریاض نے 10اوور میں 71رنز دےکر ایک اور حسن علی نے 9اوورز میں 84رنز دیے اور ایک وکٹ اپنے نام کی۔