جمیکا اور کیوبا کے درمیانی علاقے میں خوفناک زلزلہ، سونامی الرٹ جاری

زلزلے کی شدت 7.7 ریکارڈ، زلزلہ شدید ہونے کے باعث مختلف مقامات پر زمین میں گڑھے پڑ گئے

Kamran Haider Ashar کامران حیدر اشعر بدھ جنوری 04:38

جمیکا اور کیوبا کے درمیانی علاقے میں خوفناک زلزلہ، سونامی الرٹ جاری
ہوانا (اردو پوائنٹ اخبار تازہ ترین 29 جنوری 2020ء) جمیکا اور کیوبا کے درمیانی علاقے میں خوفناک زلزلے کے بعد سونامی الرٹ جاری کر دیا گیا، 7۔7 شدت کے زلزلے کے باعث مختلف مقامات پر گڑھے پڑ گئے۔ تفصیلات کے مطابق جمیکا اور کیبوبا کے درمیانی علاقے میں خوفناک زلزلے نے علاقے کو ہلا کر رکھ دیا ہے جس سے عمارتیں بری طرح متاثر ہوئی ہیں جبکہ سڑکوں پر بھی واضح طور پر گڑھے پڑ گئے ہیں۔

خبر ایجنسی کے مطابق زلزلے کا مرکز جمیکا اور کیوبا کے درمیان سمندر میں 6.2 میل کی سطحی گہرائی میں تھا۔ بین الاقوامی سونامی انفارمیشن سنٹر کا کہنا کہ سونامی کی لہر کا بڑے پیمانے پر پہلا خطرہ گزر چکا تھا، تاہم 1 فٹ تک کی معمولی سطح پر اتار چڑھاؤ ممکن ہیں۔ خبر ایجنسی کے مطابق ابتدائی طور پر کسی قسم کے جانی نقصان کی کوئی اطلاعات نہیں تاہم اس متعلق معلومات پر کام جاری ہے۔

(جاری ہے)

سونامی الرٹ جاری ہونے کے بعد لوگوں میں خوف و ہراس کا سماں ہے۔ زلزلہ کی شدت اس قدر زیادہ تھی کہ عمارتیں بری طرح ہل کر رہ گئی ہیں، اس کے علاوہ سڑکوں پر بھی بڑے بڑے گڑھے پڑ چکے ہیں۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق زلزلے کے جھٹکے امریکہ کی ریاست فلوریڈا میں بھی محسوس کیے گئے ہیں. جہاں پر شدید جھٹکوں کے باعث عمارتوں کے شیشے ٹوٹ گئے ہیں اور اسٹورز میں سامان زمین پرب کھر گیا ہے۔

علاوہ ازیں رواں ماہ کی 25 تاریخ کو ترکی میں بھی اسی قسم کا خوفناک زلزلہ آیا تھا جس میں بھاری جانی نقصان ہوا تھا، ترکی میں آنے والے زلزلے کی شدت 9۔6 ریکارڈ کی گئی تھی، زلزلے کے جھٹکے ترکی کے علاوہ اسرائیل، عمان، شام، اردن، لبنان اور دیگر ممالک میں بھی محسوس کیے گئے تھے۔ ترکی میں آنے والے زلزلے کو حالیہ کچھ عرصے کے دوران اس خطے میں آنے والا سب سے شدید زلزلہ قرار دیا گیا تھا۔ واضح رہے کہ دنیا کے مختلف ممالک گزشتہ کچھ عرصے سے مسلسل شدید زلزلوں کی زد میں ہیں۔ 2020ء کے آغاز میں ہی ماہرین نے پیشن گوئی کر دی تھی کہ رواں سال دنیا کے مختلف خطوں میں تباہ کن زلزلے آنے کا خدشہ ہے۔