بہاریہ مکئی کی فصل اگنے کے 45دن تک کھیت کو جڑی بوٹیوں سے مکمل طورپر پاک رکھیں تاکہ مکئی کی فی ایکڑزیادہ پیداوارکے حصول کو ممکن بنایا جاسکے، کاشتکاروں کو سفارش

جمعہ مارچ 22:11

فیصل آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 20 مارچ2020ء) محکمہ زراعت حکومت پنجاب نے کاشتکاروں کو سفارش کی ہے کہ وہ بہاریہ مکئی کی فصل اگنے کے 45دن تک کھیت کو جڑی بوٹیوں سے مکمل طورپر پاک رکھیں تاکہ مکئی کی فی ایکڑزیادہ پیداوارکے حصول کو ممکن بنایا جاسکے ۔ جڑی بوٹیاں روشنی ، خوراک اور پانی کے حصول میں فصل کا مقابلہ کرتی ہیں ۔ علاوہ ازیں جڑی بوٹیاں بہت سے کیڑوں اور بیماریوں کے میزبان پودوں کے طورپر بھی کام کرتی ہیں۔

(جاری ہے)

ایک اندازے کے مطابق جڑی بوٹیوں کی وجہ سے پیداوار میں 20سے 40فیصد تک کمی واقع ہوجاتی ہے ۔ کھیلیوں اور وٹوں پر کاشتہ فصل سے جڑی بوٹیوں کو بآسانی تلف کیا جاسکتا ہے۔ کاشتکار مکئی کی فصل سے جڑی بوٹیوں کی تلفی میں استعمال ہونے والی پ*کیمیائی زہروں کے انتخاب کے لیے محکمہ زراعت کے مقامی زرعی عملہ سے مشاورت کریں۔ڈریل یا پلانٹر کے ساتھ کاشتہ فصل سے جڑی بوٹیوں کی تلفی کے لیے ٹریکٹر کے ذریعے گوڈی کرکے ان کو تلف کریں اور آخری گوڈی کے بعد پودوں کے ساتھ مٹی چڑھائیں۔ جڑی بوٹیاں بہاریہ مکئی کی فصل میں فی ایکڑ کمی کا سبب بننے والی وجوہات میں سے ایک اہم وجہ ہے۔

متعلقہ عنوان :