بلاول بھٹو زرداری کی ریڈیو پاکستان کی سی بی اے کے عہدیداران سمیت 40 ملازمین کی گرفتاری کی مذمت

سلیکٹڈ حکومت نے اب جمہوری ہونے کا دکھاوا کرنا بھی چھوڑ دیا ہے،سرکاری ملازمین کو نوکریوں سے نکالنا ظلم اور ان کے احتجاج کو طاقت سے روکنا جبر ہے،چیئر مین پیپلز پارٹی کا بیان

جمعرات اکتوبر 17:53

بلاول بھٹو زرداری کی ریڈیو پاکستان کی سی بی اے کے عہدیداران سمیت 40 ملازمین ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 22 اکتوبر2020ء) پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئر مین بلاول بھٹو زرداری نے ریڈیو پاکستان کی سی بی اے کے عہدیداران سمیت 40 ملازمین کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے کہاہے کہ سلیکٹڈ حکومت نے اب جمہوری ہونے کا دکھاوا کرنا بھی چھوڑ دیا ہے،سرکاری ملازمین کو نوکریوں سے نکالنا ظلم اور ان کے احتجاج کو طاقت سے روکنا جبر ہے۔

(جاری ہے)

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے ریڈیو پاکستان کی سی بی اے کے عہدیداران سمیت 40 ملازمین کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے اپنے بیان میں پی پی پی چیئرمین نے یو ایس او کے جنرل سیکریٹری محمد اعجاز اور دیگر کی گرفتاری کی مذمت کی ہے۔ انہوںنے کہاکہ سلیکٹڈ حکومت نے اب جمہوری ہونے کا دکھاوا کرنا بھی چھوڑ دیا ہے۔بلاول بھٹو زرداری نے کہاکہ پرامن احتجاج ہر شہری کا حق ہے، مگر لگتا ہے اس پر بھی غیراعلانیہ پابندی لگا دی گئی ہے۔

انہوںنے کہاکہ سرکاری ملازمین کو نوکریوں سے نکالنا ظلم اور ان کے احتجاج کو طاقت سے روکنا جبر ہے۔ انہوںنے کہاکہ ریڈیو پاکستان کے برطرف ملازمین کو بلاتاخیر بحال اور گرفتار ملازمین کو فوراً رہا کیا جائے۔ انہوںنے کہاکہ پیپلزپارٹی اقتدار میں آکر برطرف ملازمین کو مراعات کے ساتھ بحال کریگی۔