ziddi machli ka injaam

Ziddi Machli Ka Injaam

ضدی مچھلی کا انجام

موسم بہت ہی خوشگوار تھا ،جنگل میں پرندوں اور جانوروں کی پیاری پیاری آوازیں گونج رہی تھیں ۔پاس ہی ایک بڑا تالاب تھا جس میں بہت سی رنگ برنگی مچھلیاں رہتی تھیں ۔اِن میں نیلی اور پیلی مچھلیوں کی آپس میں گہری دوستی تھی ۔نیلی مچھلی بہت عقلمند تھی تو پیلی مچھلی ضدی اور بے وقوف تھی ۔

روبینہ ناز
موسم بہت ہی خوشگوار تھا ،جنگل میں پرندوں اور جانوروں کی پیاری پیاری آوازیں گونج رہی تھیں ۔پاس ہی ایک بڑا تالاب تھا جس میں بہت سی رنگ برنگی مچھلیاں رہتی تھیں ۔اِن میں نیلی اور پیلی مچھلیوں کی آپس میں گہری دوستی تھی ۔

نیلی مچھلی بہت عقلمند تھی تو پیلی مچھلی ضدی اور بے وقوف تھی ۔سب مچھلیاں اُسکو ضدی مچھلی کہہ کر پکار تی تھیں ۔”آج موسم کتنا خوشگوار ہے “ضدی مچھلی نے پیلی سے کہا ; ”اِس موسم میں ہم تیرا کی کریں گی “۔ضدی مچھلی کی بات پر نیلی مچھلی اُسکے ساتھ ہی تیرنے لگی ۔
ابھی تھوڑی دور ہی گئی تھی کہ اُنہیں دو مچھیرے دکھائی دئیے ۔اُنہیں دیکھتے ہی مچھیروں نے وہاں جال ڈال دئیے ۔یہ دیکھ کر دونوں مچھلیاں واپس اپنی ساتھی مچھلیوں کی طرف بڑھ گئیں اور اُنہیں مچھیروں کے خطر ے سے آگاہ کیا ۔

(جاری ہے)


باقی مچھلیاں تو مچھیروں کے جال سے دور چلی گئیں مگر ضدی مچھلی کی عقل میں یہ بات نہ سمائی ۔

دوسری جانب نیلی مچھلی اپنی دوست ضدی مچھلی کو اکیلا نہیں چھوڑ نا چاہتی تھی اِسلئے اس نے ضدی مچھلی کو سمجھایا ۔دیکھو میری پیاری دوست اس وقت یہاں خطرہ ہے ہمیں یہاں سے فوراََ بھاگ جانا چاہئے ۔وہ ابھی یہ بات کرہی رہی تھی کہ اُ ن پر جال گر ا اور وہ دونوں کچھ دوسری چھوٹی مچھلیوں کے ساتھ مچھیروں کے جال میں پھنس گئیں ۔
جب مچھیروں نے جال کی سب مچھلیاں ایک ٹوکری میں ڈالیں تو نیلی مچھلی کو بے دم دیکھ کر بولا ۔یہ تو مری ہوئی ہے ،یہ میرے کسی کام کی نہیں یہ کہہ کراُس نے نیلی مچھلی کو واپس تالاب میں پھینک دیااور باقی مچھلیوں کو چاقو سے کاٹنے لگا ۔جب ضدی مچھلی کو کاٹا گیا ،تب اُسے احساس ہوا کہ کاش میں ضدنہ کرتی تو اِس وقت میرایہ حال نہ ہوتا ۔اِس طرح ضدی مچھلی کو سزا مل گئی اور نیلی مچھلی کی بروقت تر کیب سے اُسکی جان بچ گئی ۔

Your Thoughts and Comments