ایبٹ آباد کے نواحی علاقہ ترہانہ میں بلاسٹنگ کے دوران بھاری پتھروں کی زد میں آ کر دو مزدور شدید زخمی ہو گئے

بدھ اپریل 14:40

ایبٹ آباد۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 اپریل2018ء) ایبٹ آباد کے نواحی علاقہ ترہانہ میں بلاسٹنگ کے دوران بھاری پتھروں کی زد میں آ کر دو مزدور شدید زخمی ہو گئے۔ غیرقانونی بلاسٹنگ کرنے والے مائننگ کے مالکان نے زخمیوں کو ہسپتال لے جانے کی بجائے نجی ڈاکٹر کو گھر پر ہی بلا کر زخمیوں کی مرہم پٹی کی۔ سپریم کورٹ کے واضح احکامات کے باوجود محکمہ معدنیات افسران کی ملی بھگت سے فاسفیٹ حصول کیلئے بلاسٹنگ کا نہ تھمنے والا سلسلہ دیدہ دلیری سے جاری ہے۔

(جاری ہے)

ذرائع کے مطابق ترہانہ میں ایک مائننگ کارپوریشن مالکان کی جانب سے فاسفیٹ حصول کے ذریعہ بلاسٹنگ جاری تھی، بلاسٹنگ کے دوران دو مزدور بھاری پتھروں کی زد میں آ کر شدید زخمی ہو گئے۔ وقوعہ کی اطلاع پر مائننگ کارپوریشن کے مالکان موقع پر پہنچ آئے اور شدید زخمی مزدوروں کو ہسپتال لے جانے کی بجائے اپنے گھر لے گئے اور ڈاکٹر کو وہیں بلا کر زخمیوں کو مرہم پٹی کروائی۔ واضح رہے کہ سپریم کورٹ نے رہائشی علاقوں میں بلاسٹنگ پر مکمل پابندی عائد کر رکھی ہے تاہم مائنز مالکان کی جانب سے محکمہ معدنیات کے افسران کو بھاری نذرانے دیکر غیرقانونی بلاسٹنگ کا سلسلہ جاری ہے۔ قانون نافذ کرنے والے اداروں کو اس حوالہ سے ٹھوس اور جامع اقداما ت اٹھانے کی ضرورت ہے۔

متعلقہ عنوان :