کمرشل گیس کی قیمتوں میں اضافہ سے صنعتی شعبہ متاثر ہوگا ‘شہباز اسلم

صنعتی شعبہ کیلئے ایل این جی کے برابر گیس کی قیمت مقررکرنا زیادتی ہے پیداواری لاگت میں اضافہ مہنگائی بڑھے گی‘تنویر احمد شیخ

بدھ اپریل 15:11

کمرشل گیس کی قیمتوں میں اضافہ سے صنعتی شعبہ متاثر ہوگا ‘شہباز اسلم
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 اپریل2018ء) تاجر رہنما و ممبر لاہور چیمبرز آف کامرس وانڈسٹری سابق وائس چیئرمین فرایا شہباز اسلم نے کہا ہے کہ سوئی نادرن گیس کمپنی لمٹیڈ کی جانب سے کمرشل سطح پر گیس کی قیمتوں میں اضافہ پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے صنعتی شعبہ متاثر ہوگا ۔صنعتی شعبہ کیلئے ایل این جی کے برابر قیمت مقررکرنا زیادتی ہے اس سے صنعتوں کی پیداواری لاگت میں اضافہ اور اشیاء مہنگی ہونے سے ملک میں مہنگائی بڑھے گی ۔

ان خیالات کا اظہار انہوںنے فائونڈ ر چیئرمین عدنان بٹ،ارشد بیگ،تنویر احمد،حقیق احمد،شاہد بیگ اور دیگر صنعتکاروں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔سینئر وائس چیئرمین فرایا تنویر احمد شیخ نے کہا کہ سوئی نادرن گیس کمپنی نے گزشتہ 3ماہ کے بلوں میں آر ایل این جی کا ریٹ لگا کر یکمشت صنعتکاروں کو بل بھجوادیئے ہیں حالانہ سوئی گیس کی نسبت آر ایل این جی تقریباً122فیصد سستی ہے۔

(جاری ہے)

یہ صنعتی شعبہ سے زیادتی ہے انہوں نے کہا کہ گیس قدرتی ذرائع سے حاصل ہوتی ہے اس کے باوجود اس کی قیمتوں میں اضافہ بلاجواز اور صنعتی شعبہ پر بوجھ ہے جس کا اثر ملکی برآمدات پر بھی پڑے گا کیونکہ گیس کی قیمتوںمیں ایک تہائی اضافہ سے اشیاء مہنگی ہونگی اور بیرون ملک مہنگی اشیاء کی مانگ میں کمی سے برآمدات کمی کاشکار ہونگی اور تجارتی خسارہ میں اضافہ ہوگا اس لیے سوئی گیس کے اضافی بل فی الفور واپس لیے جائیں اور صنعتی شعبہ کو ریلیف فراہم کیا جائے۔

متعلقہ عنوان :