ابا مل گیا ہے اب بیوا اماں کی بچوں سمیت تلاش جاری ہے جس میں جلد اہم کامیابی حاصل کرلیں گے ، سعید احمد ہاشمی

مئی کو اپنی نئی سیاسی جماعت کے کونسل کا اجلاس طلب کرلیا ہے ،جس میں موجودہ وزیراعلی میر عبدالقدوس بزنجو ،صوبائی وزراء ،ارکان اسمبلی ،تین سابق وزراء اعلی سمیت دیگر اہم شخصیت شمولیت کا اعلان کرینگے اور نئی کونسل کا بھی اسی دن اعلان کیا جائیگا ،بزرگ سیاستدان کی پریس کانفرنس

بدھ اپریل 16:58

کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 اپریل2018ء) بلوچستان عوامی پارٹی کے مرکزی رہنماء سابقہ سینیٹر بزرگ سیاستدان بابا رحمتے ’’سعید احمد ہاشمی ‘‘نے کہاہے کہ 11مئی کو اپنی نئی سیاسی جماعت کے کونسل کا اجلاس طلب کرلیا ہے ،جس میں موجودہ وزیراعلی میر عبدالقدوس بزنجو ،صوبائی وزراء ،ارکان اسمبلی ،تین سابق وزراء اعلی سمیت دیگر اہم شخصیت شمولیت کا اعلان کرینگے اور نئی کونسل کا بھی اسی دن اعلان کیا جائیگا ،ابا مل گیا ہے اب بیوا اماں کی بچوں سمیت تلاش جاری ہے جس میں جلد ہم کامیابی حاصل کرلیں گے ،یہ بات انہوں نے بلوچستان مسلم لیگ (ن) کے سابقہ صوبائی جنرل سیکرٹری وسینیٹر ملک نصیب اللہ بازئی کی بلوچستان عوامی پارٹی میں اپنے 35ساتھیوں سمیت شمولیت کے موقع پر سعید ہاشمی نے بدھ کے روز کوئٹہ پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی ،اس موقع پر سابق صوبائی وزیر میر عبدالغفور لہڑی ودیگر مسلم لیگ (ن) کے سینکڑوں کارکن اور ساتھی موجود تھے ،سعید ہاشمی نے کہاکہ 29مار چ کو تمام ساتھیوں نے ملکر ایک نئی سیاسی جماعت بنانے کا اعلان کیا تھا ،اسکا پہلا کونسل کا اجلا س11مئی کو طلب کیا گیا ہے جس میں پارٹی کے منشور ،آئین اور صوبائی قیادت کا چنائو کیا جائے گا ،انتخابات میں بھر پور انداز میں حصہ لیا جائے گا ،انہوں نے کہاکہ حب میں ایک قوم پرست جماعت کے سربراہ نے ہماری پارٹی پر جو تنقید کی ہے یا اس بارے میں جن خیالات کا اظہار کیا ہے وہ افسوس ناک بات ہے ہم بھی صوبے کی ترقی وخوشحالی چاہتے ہیں ،کچھ علاقائی پارٹیوں کو ہم سے خطرہ لاحق ہے جو ہم بلاوجہ تنقید کررہے ہیں ،ہم تنقید سے نہیں گھبراتے ہیں مگر تنقید اصولوں پرہونی چاہیے وہ جماعت بھی صوبے کی ترقی چاہتے ہیں ہم بھی ترقی چاہتے ہیں ہم کسی پر بلاوجہ تنقید نہیں کرتے ہیں ،انہوں نے کہاکہ 29مارچ کو جب میں نئی پارٹی بنانے کا اعلان کیا تھا تو اس وقت میں نے یہ بات واضح کی تھی کہ وزیراعلی بلوچستان سمیت دیگر صوبائی وزراء جو اس وقت اس پریس کانفرنس میں موجود ہیں انکی موجودگی سے یہ بات واضح ہوتی ہے کہ وہ نیم رضا ہے ،آہستہ آہستہ بات چیت جاری تھی ،اب مکمل ہوگئی ہے اور 11مئی کو وزیراعلی بلوچستان سمیت دیگر تین سابق وزراء اعلی ،ارکان اسمبلی بلوچستان عوامی پارٹی میں شمولیت کا اعلان کرینگے اور اسی دن پارٹی کے منشور ،عہدیداروں اورآئین کا بھی اعلان کیا جائیگا ،اس موقع پرسینیٹر نصیب اللہ خا ن بازئی نے سابقہ صوبائی وزیراعلی نواب ثناء اللہ زہری کا نام لئے بغیر ان پر شدید نقطہ چینی کی اور کہاکہ انکی وجہ سے مسلم لیگ (ن) بلوچستان میں ختم ہوگئی ہے اسکے بارے میں میں نے مرکزی قیادت کو اطلاع دی تھی مگر ہماری کسی بات پر توجہ نہیں دی گئی ،میں مسلم لیگ (ن) میں 22سال اس پارٹی میں رہا اور اس نتیجے پر پہنچا کہ یہ پارٹی بلوچستان کے عوام کیلئے کچھ نہیں کرسکتی ہے سی پیک کیلئے 50ارب ڈالر آئے اسکے بارے میں کوئی پتہ نہیں کہ یہ پیسے کہاں گئے ،انہوں نے کہاکہ آج میں 22سال کے بعد مسلم لیگ (ن) چھوڑ کر بلوچستان عوامی پارٹی میں اپنے ساتھیوں سمیت شمولیت کا اعلان کررہاہوں اور آخر وقت تک اس پارٹی میں رہوں گا سیاست میں حالات کے مطابق فیصلے کئے جاتے ہیں ،سعید احمد ہاشمی نے مزید کہاکہ بلوچستان عوامی پارٹی جسے ابا کے نام سے یاد کیا جاتاہے ،اب ابا کیلئے بیوا بچوں سے سمیت کی تلاش جاری ہے امید ہے کہ جلد ہم بیوا اور بچوں کو تلاش کرنے میں کامیاب ہوجائیں گے اور ہمیں خوشی ہوگی کہ جو بیوا آئے گی وہ اپنے ساتھ بچے بھی لائے گی ۔

متعلقہ عنوان :