سانحہ ماڈل ٹاون کے مقدمہ 510/14 میں مزید تین گواہوں کے بیانات قلمبند

ڈی آئی جی رانا عبدالجبار اور ایس ایس پی ڈاکٹر اقبال کی جانب سے حاظری معافی کی درخواست دے دی گئی

جمعہ اپریل 20:13

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 اپریل2018ء) انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے سانحہ ماڈل ٹاون کے مقدمہ 510/14 میں مزید تین گواہوں کے بیانات قلمبند کرلیے۔ ڈی آئی جی رانا عبدالجبار اور ایس ایس پی ڈاکٹر اقبال کی جانب سے حاظری معافی کی درخواست دی گئی۔عدالت نے جے آئی ٹی کی تبدیلی کے لیے دی گئی درخواست کی کاپی کو ریکارڈ کا حصہ بنانے کے لیے جرح کے لیے سماعت آج تک ملتوی کردی۔

گواہان سب انسپکٹر ثناء اللہ، محرر ابوبکر اور محرر ہدایت علی ، ڈی ایس پی محمد ارشد اور کانسٹیبل نسیم کا بیان قلمبند کر لیا گیا ۔

(جاری ہے)

گزشتہ سماعت پر عدالت نے استغاثہ میں مدعی جواد حامد اور پولیس کی مدعیت میں دائر 510 کیس میں دو گواہوں کے بیانات قلمبند کرنے کے بعد جرح مکمل کی تھی۔۔پولیس کی مدعیت میں دائر مقدمے میں گواہان سٹور کیپر جاوید اور کیمرہ مین عظیم کے بیانات پر جرح مکمل کی گئی۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے استغاثہ کیس کے مدعی اور پاکستان تحریک انصاف کے رہنما جواد حامدکا کہنا تھا کہ سانحہ ماڈل ٹاون کے اصل ملزمان شریف برادران ہیں ان سب نے یہ سانحہ جان بوجھ کر کروایا ۔انسداد دہشت گردی عدالت نمبر دو کے جج اعجاز حسن اعوان نے سانحہ ماڈل ٹاون استغاثہ پر سماعت کی ۔