صوبائی حکومت نے خزانہ لوٹ لیا، اب بجٹ پیش کرنے سے کترارہی ہے، امیرحیدرہوتی

پیر اپریل 18:14

صوبائی حکومت نے خزانہ لوٹ لیا، اب بجٹ پیش کرنے سے کترارہی ہے، امیرحیدرہوتی
شانگلہ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 اپریل2018ء) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدرو سابق وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا امیر حیدر خان ہوتی نے شاہ پور میں عوامی جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ تحریک انصاف کی حکومت خزانے کو لوٹ کر اب بجٹ پیش کرنے سے کترا رہی ہے اور طر ح طرح کے بہانے بنا کر عوام کو پریشان کیا ہے، دوبارہ اقتدار ملا تو پولیس فورس کے لئے ہماری حکومت کے خزانے کا منہ کھلا رہے گا خیبر پختونخوا بہادر پولیس فورس کو سلام پیش کرتا ہوں ان کی قربانیاں لازوال ہیں۔

انہوں نے کہاکہ پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان اپنے آپ کو ایماندار ثابت کرنے کی کوشش کر رہے ہیں اور اپنے ساتھیوں پر بھی ایمانداری کا لیبل لگا رہے ہیں حالانکہ سب کے سب بک گئے سینٹ الیکشن میں تحریک انصاف کے 20 ممبرز بک گئے اور ایمانداری کا نام و نشان تک نہ رہ پایا ۔

(جاری ہے)

اب عمران خان خاتون ممبرز سے کلام پاک کے واسطے صفائی مانگ رہے ہیں جو ٹھیک کام نہیں ہے ۔

میں عمران خان کو کہتا ہوں کہ وہ بھی کلام پاک پر ہاتھ رکھ کر قسم اٹھا کراپنی صفائی پیش کریں کہ باہر سے جن بیرون ملک لوگوں نے تحریک انصاف کو جو چندے دئے وہ کہاں ہے۔ انھوں نے خیبر پختونخوا کے وزیر اعلیٰ پرویز خٹک کو بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ عمران خان سب سے پہلے پرویز خٹک کی صفائی پیش کریں ۔ پشتونوں کے ساتھ امتیازی سلوک کیا جارہا ہے جو کہ کسی بھی صورت برداشت نہیں کیا جائیگا۔

عوامی نیشنل پارٹی سے پہلے صوبہ خیبر پختونخوا میں نو یونیورسٹیاں تھی اور ہمارے دور حکومت میں دس مزید یونیورسٹیاں قائم کی گئیں جس سے عوامی نیشنل پارٹی کی تعلیمی پالیسی کی وضاحت ہوتی ہے ، عوامی نیشنل پارٹی کامنشور پشتونوں کے بچوں کو قلم دینا ہے ہر ضلع میں اپنا یونیورسٹی ہو جبکہ تحریک انصاف نے تا حال کوئی ایسی اجتماعی کارکردگی نہیں دکھائی ۔ پی ٹی آئی نے گزشتہ ستر سالوں میں سے ریکارڈ سود پر قرضے لیکر عوام پر مزید بوجھ ڈال دیا پورے دور اقتدار میں ایک ترقیاتی منصوبہ بھی مکمل نہیں کیا عوام کو کیا منہ دکھائنگے خزانے میں کچھ بھی نہیں، خالی خزانے سے کیا بجٹ پیش کیا جائیگا عوامی نیشنل پارٹی اپنی کارکردگی کی بنیاد پر عوام سے آئندہ ووٹ مانگنے جا رہی ہے۔