کراچی سمیت اندرون سندھ انٹر کے امتحانات جاری

کراچی میں ہونے والا گیارہویں جماعت کا ریاضی کا پرچہ بھی امتحانی وقت سے قبل آئوٹ ہوگیا پرچہ آ ئوٹ ہونا افسوس ناک بات ہے، انٹر بورڈ کراچی کا میڈیا پر پابندی لگانا سچ کو دبانے والی بات ہے، گورنرسندھ

جمعرات اپریل 15:37

کراچی سمیت اندرون سندھ انٹر کے امتحانات جاری
کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 26 اپریل2018ء) کراچی سمیت سندھ بھر میںاعلی ثانوی تعلیمی بورڈ کے تحت انٹر کے امتحانات جاری ہیں۔۔کراچی میں جمعرات کو ہونے والا گیارہویں جماعت کا ریاضی کا پرچہ بھی امتحانی وقت سے قبل آئوٹ ہوگیا ہے۔امتحانی مراکز میں ویجیلنس ٹیمیں نقل کی روک تھام میں مکمل طور پر ناکام ہو گئی ہے اور طلبہ کھلے عام نقل کرنے میں مصروف ہیں۔

اس سے قبل کراچی میں بارہویں جماعت کا زولوجی کا پرچہ نو بجے سے قبل ہی سوشل میڈیا پر آئوٹ ہو گیا تھا۔پہلا پیپر آوٹ ہونے کے باوجود حکومت اور انٹرمیڈیٹ بورڈ کی جانب سے پیپر آئوٹ ہونے کی کوئی روک تھام نہیں کی گئی ہے۔دوسری جانب سکھر بورڈ کے تحت ہونے والے انٹر کے امتحانات جاری ہیں جہاں نقل مافیا کا راج برقرار ہے، جمعرات کو ہونے والا گیارہویں جماعت پرنسپل آف اکنامکس کا پرچہ امتحانی مراکز سے آئوٹ ہو گیا اور طلبانے نقل کے لیے واٹس ایپ گروپ کا آزادانہ استعمال کیا۔

(جاری ہے)

ادھر گھوٹکی میں بھی ہونے والا گیارہویں جماعت کا ریاضی کا پرچہ امتحانی وقت سے پہلے ہی طلبا کو سوشل میڈیا پر دستیاب ہو گیا ہے۔واضح رہے کہ کراچی سمیت سندھ بھر میں انٹر کے امتحانات کے دوران بورڈ انتظامیہ نے امتحانی مراکز میں میڈیا کوریج پر پابندی عائد کر رکھی ہے۔حکومت سندھ کی جانب سے امتحانی مراکز کیاطراف دفعہ 144 نافذ ہے اور وزیر اعلی سندھ کی ہدایت پر امتحانی مراکز میں موبائل فون لے جانے پر پابندی عائد ہے۔ا س صورت حال کے حوالے سے گورنر سندھ محمد زبیر کا بیان سامنے آیا تھا جس میں انہوں کہا تھا کہ انٹر کا پرچہ آ ئوٹ ہونا افسوس ناک بات ہے، انٹر بورڈ کراچی کا میڈیا پر پابندی لگانا سچ کو دبانے والی بات ہے۔