وفاقی وزیر سینیٹر مشاہد اللہ خان سے آل پارٹیز حریت کونسل کے وفد کی ملاقات

ْکشمیر کاز کا موسمیاتی تبدیلی سے براہ راست تعلق ہے، بھارت کی 7 لاکھ فوج کی موجودگی کے علاقہ کے ماحول پر اثرات ہوئے ہیں، بھارتی فوج کی جانب سے فوسل ایندھن اور ہتھیار کے استعمال سے ماحول تباہ ہو رہا ہے،سینیٹر مشاہد اللہ خان

جمعہ اپریل 23:53

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 27 اپریل2018ء) وفاقی وزیر برائے موسمیاتی تبدیلی سینیٹر مشاہد اللہ خان سے آل پارٹیز حریت کونسل کے ایک وفد نے وزارت موسمیاتی تبدیلی میں ملاقات کی جس کے دوران وفاقی وزیر سینیٹر مشاہد اللہ خان نے کہا کہ کشمیر کاز کا موسمیاتی تبدیلی سے براہ راست تعلق ہے، بھارت کی 7 لاکھ فوج کی موجودگی کے علاقہ کے ماحول پر اثرات ہوئے ہیں، وہ بھارتی فوج فوسل ایندھن اور ہتھیار استعمال کر رہی ہے جس سے ماحول تباہ ہو رہا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ میں بچپن سے ہی کشمیر کا مسئلہ سنتا رہاہوں جبکہ مظفر آباد میں کشمیر کے مسئلہ پر اجلاس بھی میری تجویز پر منعقد ہوا تھا ۔ انہوںنے کہا کہ نواز شریف کی حکومت کشمیر کا ز کو دوبارہ حکومت کے اعلی ایجنڈا کے طور پر لائی ۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہاکہ برہان وانی کی قربانی کے بعد اس مسئلہ نے دنیا بھر کی توجہ حاصل کی ۔ موجودہ حکومت نے اس مسئلہ کو بین الاقوامی فورمز اور سفارتی برادریوں میں اجاگر کیا ۔

بھارت جمہوری ملک ہے تاہم اس کے باوجود وہ کشمیریوں کے حق خودارایت کے لئے استصواب رائے کے انعقاد سے انکاری ہے ۔ انہوںنے وفد کوبتایا کہ آئیڈیالوجی نے فزیکل جنگ ہمیشہ جیتی ہے ہماری حکومت ، وزارت اور پاکستانی عوام کشمیر کاز کی مکمل حمایت کرتے ہیں ۔ وزارت موسمیاتی تبدیلی کی پارلیمانی سیکرٹری رومینہ خورشید عالم نے کہا کہ ہم نے کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی اور مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے کے لئے بین الاقوامی کانفرنس منعقد کی۔

آزاد جموں اور کشمیر آل پارٹیز حریت کانفرنس کے کنوینئر غلام محمد صافی نے کہا کہ مسئلہ کشمیر انسانی حقوق کا مسئلہ ہے اور بھارتی فورسز کی بربریت اور بہیمانہ کارروائیوں کے گلیشئیرز پر بھی منفی اثرات پڑ رہے ہیں کیونکہ اس علاقہ سے مسلمان ہجرت کر رہے ہیں۔ انہوںنے مطالبہ کیا ہے کہ آئندہ عام انتخابات کے لئے منشور میں مسئلہ کشمیر کو سر فہرست رکھا جائے جس پر وفاقی وزیر موسمیاتی تبدیلی سینیٹر مشاہد اللہ خان نے اس تجویز سے اتفاق کیا اور کہا کہ وہ اس مسئلہ کو تمام سیاسی جماعتوں کے منشور میں سر فہرست رکھوانے کی تجویز کو آگے بڑھائیں گے۔

ملاقات میں موسمیاتی تبدیلی کی پارلیمانی سیکرٹری رومینہ خورشید عالم ، پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن کی سیکرٹری ایم اپی اے مہوش عظمت حیات، سید اعجاز صافی، سید فیض نقشبندی، محمود احمد صغیر اور آل پاکستان حریت کونسل کے دیگر نمائندگان بھی موجود تھے۔