علمائے کرام معاشرے میں تحمل کی فضا کو پروان چڑھانے کے لئے اپنا بھر پور کردار ادا کریں، گورنر پنجاب

ہمیں ایک پلیٹ فارم پر متحد ہو کر ایسے عناصر کے مزموم عزائم کو ناپاک بنانا ہے جو ہمیں مذہب کے نام پر تقسیم کرنا چاہتے ہیں ملک کی سلامتی ،ترقی اور خوشحالی کے لئے ہم سب کو مل کر کام کرنا ہوگا، علمائے کرام سے گفتگو

پیر اپریل 23:31

علمائے کرام معاشرے میں تحمل کی فضا کو پروان چڑھانے کے لئے اپنا بھر پور ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 30 اپریل2018ء) گورنر پنجاب ملک محمد رفیق رجوانہ نے کہا کہ علمائے کرام کا قومی فریضہ ہے کہ وہ اسلامی تعلیمات کو عام کرنے اور معاشرے میں تحمل و برداشت کی فضا کو پروان چڑھانے کے لئے اپنا بھر پور کردار ادا کریں۔ ہمیں ایک پلیٹ فارم پر متحد ہو کر ایسے عناصر کے مزموم عزائم کو ناپاک بنانا ہے جو ہمیں مذہب کے نام پر تقسیم کرنا چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ملک کی سلامتی ،ترقی اور خوشحالی کے لئے ہم سب کو مل کر کام کرنا ہوگا۔ ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے سوموار کوگورنر ہا?س لاہور میں الحاج شفقت حسین بھٹہ، ممبر صوبائی اتحاد بین المسلمین کمیٹی پنجاب ، مخدوم سید عباس رضا سجادہ نشین آستانہ حضرت پیر لعل شاہ ولی ملتان و دیگر علمائے کرام سے ملاقات کے دوران کیا۔

(جاری ہے)

گورنر پنجاب نے کہاکہ اسلام محبت، برداشت اور مساوات کا دًرس دیتا ہے جو تمام طبقات کے حقوق کے تحفظ کو یقینی بنانے کا ضامن ہے۔

انہوں نے کہا کہ علمائے کرام اور مشائخ نے دین اسلام کے صحیح تشخص کو اجاگر کرنے ،ملکی فلاح و بہبود اور اتحاد بین المسلمین کے فروغ کے لئے ہمیشہ مثبت کردار ادا کیا ہے جو قابل تحسین ہے۔ انہوں نے کہا کہ علمائے کرام اپنے خطبات کے ذریعے لوگوں میں اخلاقی اقدار اور حقوق العباد کی بیداری کا جذبہ پیدا کریں جو تمام مسائل کا حل ہے۔قبل ازیں، گورنر پنجاب ملک محمد رفیق رجوانہ سے گورنر ہا?س لاہور میں نئی منتخب ہونے والی خاتون محتسب پنجاب رخسانہ گیلانی نے ملاقات کی۔

گورنر پنجاب نے کہا کہ خاتون محتسب کے ادارے کو مزید فعال بنانے کے لئے مؤثر اقدامات کئے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ خواتین کی طرف سے دادرسی کے لئے دی جانے والی درخواستوں کو جلد از جلد نمٹایا جائے تاکہ انہیں بروقت انصاف فراہم کیا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ تمام قانونی تقاضے پورے کرنے کے لئے ماہرین قانون کی خدمات بھی حاصل کی جائیں۔۔گورنر نے کہا کہ حکومت پنجاب نے خواتین کو اٴْن کی ملازمت کی جگہ پر ہر ممکن تحفظ فراہم کرنے کے لئے قانون سازی کی ہے۔ اس موقع پر خاتون محتسب رخسانہ گیلانی نے کہا کہ وہ ادارے کی نیک نامی اور خواتین کے مسائل کو میرٹ پر حل کرنے کے لئے پوری عزم اور تندہی سے کام کریں گی۔