سینیٹر گل بشریٰ کا شیرانی اور موسیٰ خیل کی نئی انتخابی حلقہ بندیوں پر نظرثانی کرنے کا مطالبہ

جمعہ مئی 15:17

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 مئی2018ء) بلوچستان سے تعلق رکھنے والی سینیٹر گل بشریٰ نے شیرانی اور موسیٰ خیل کی نئی انتخابی حلقہ بندیوں پر نظرثانی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

(جاری ہے)

جمعہ کو ایوان بالا کے اجلاس میں عوامی اہمیت کے معاملہ پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ نئی مردم شماری کے بعد انتخابی حلقہ بندیاں کی گئیں، پی پی 1 شیرانی کے حوالے سے الیکشن کمیشن نے نیا حلقہ بنایا ہے۔ اس سے شیرانی اور موسیٰ خیل کے عوام کی حق تلفی ہوئی ہے۔ کمیشن کے اس فیصلے کی مذمت کرتے ہیں۔ اس فیصلے پر نظرثانی کی جائے۔ چیئرمین نے کہا کہ کمیشن کے فیصلے کے خلاف عدالتیں ہیں، اس حوالے سے مناسب فورم ہے۔