سعودی فرمانروا اور شاہ مراکش مابین ٹیلی فونک گفتگو، ایران کی بڑھتی مداخلت کے خلاف مل کرکام کرنے پر اتفاق

سعودی حکومت اور عوام ایران کی طرف سے لاحق خطرات میں رباط کے ساتھ ہیں، سعودی فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز

جمعہ مئی 18:46

ریاض(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 04 مئی2018ء) سعودی عرب کے فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور مراکش کے بادشاہ شاہ محمد ششم مابین ٹیلی فونک گفتگو میں ایران کی بڑھتی مداخلت کے خلاف مل کرکام کرنے پر اتفاق کیا گیا ہے،،سعودی حکومت اور عوام ایران کی طرف سے لاحق خطرات میں رباط کے ساتھ ہیں۔غیر ملکی میڈیا کے مطابقسعودی عرب کے فرمانروا شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور مراکش کے بادشاہ شاہ محمد ششم نے ایران کی بڑھتی مداخلت کے خلاف مل کرکام کرنے پر اتفاق کیا ہے۔

شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور مراکشی فرمانروا کے درمیان ٹیلیفون پر بات چیت ہوئی۔اس موقع پر خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود نے مراکشی فرمانروا کو یقین دلایا کہ سعودی حکومت اور عوام مراکش کو ایران کی طرف سے لاحق خطرات میں رباط کے ساتھ ہیں۔

(جاری ہے)

ان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب برادر ملک مراکش کی سلامتی، وحدت اور استحکام پر آنچ نہیں آنے دے گا۔

دونوں رہ نماؤں نے ایرانی رجیم کی عرب ممالک میں مداخلت اور عرب حکومتوں کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کی ایرانی سازشوں کا مل کر مقابلہ کرنے سے اتفاق کیا۔خیال رہے کہ تین روز قبل مراکش نے ایران پر علیحدگی پسند گروپ پولیساریو فرنٹ کی عسکری معاونت کا الزام عاید کرنے کے بعد تہران سے سفارتی تعلقات منقطع کرلیے تھے۔ سعودی عرب سمیت کئی دوسرے ممالک نے مراکش کے ساتھ ایرانی سازشوں کے خلاف مکمل یکجہتی کا اظہار کیا ہے۔

متعلقہ عنوان :