رواں مالی سال کے ابتدائی دس ماہ کے دوران بیرون ملک مقیم پاکستانیوںنے 16.25 ارب ڈالر کی ترسیلات بھیجیں

جمعرات مئی 22:26

رواں مالی سال کے ابتدائی دس ماہ کے دوران بیرون ملک مقیم پاکستانیوںنے ..
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 10 مئی2018ء) رواں مالی سال کے ابتدائی دس ماہ کے دوران بیرون ملک مقیم پاکستانیوںنے 16.25 ارب ڈالر کی ترسیلات بھیجیںجو گزشتہ سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں3.92فیصد زائد ہے تاہم گزشتہ ماہ اپریل کے دوران اس سے پچھلے ماہ مارچ کے مقابلے میں ترسیلات زر میں6.89فیصد کمی ریکارڈ کی گئی ۔اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے جاری اعداد وشمار کے مطابق بیرون ملک مقیم پاکستانی کارکنوں نے مالی سال 18ء کے پہلے دس ماہ (جولائی تا اپریل ) میں16257ملین امریکی ڈالر وطن بھجوائے، جو اس میں 3.92 فیصد کی نمو کو ظاہر کرتا ہے جبکہ گذشتہ برس کی اسی مدت میں 15643.97 ملین ڈالر موصول ہوئے تھے۔

اپریل 2018ء میں کارکنوں کی ترسیلات زر کی مالیت1650.59 ملین ڈالر تھی جو مارچ2018 ء کے مقابلے میں6.89فیصد کم، اور اپریل 2017ء کے مقابلے میں 7.25فیصدزیادہ ہیں۔

(جاری ہے)

بلحاظ ملک اپریل 2018ء کی تفصیلات کے مطابق سعودی عرب،، متحدہ عرب امارات،، امریکہ،، برطانیہ،، خلیج تعاون کونسل کے ملکوں(بشمول بحرین، کویت، قطر اور عمان)) اور یورپی یونین کے ملکوں سے بالترتیب399.56 ملین ڈالر358.28 ملین ڈالر،،240.39ملین ڈالر،،32.582 ملین ڈالر،،167.68ملین ڈالر،، اور 54.74ملین ڈالر پاکستان بھجوائے گئے،جبکہ اپریل 2017ء میں ان ملکوں سے ا?نے والی رقوم بالترتیب439.13ملین ڈالر،،344.01 ملین ڈالر،،199.69ملین ڈالر،، 191.62 ملین ڈالر،،175.18 ملین ڈالر اور41.89ملین ڈالر تھیں۔

اپریل 2018ء میں ملائشیا، ناروے،، سوئٹزر لینڈ، آسٹریلیا، کینیڈا،، جاپان اور دیگر ملکوں سے آنے والی ترسیلات زر مجموعی طور پر197.36 ملین ڈالر رہیں جبکہ اپریل 2017میں ان ملکوں سی147.42 ملین ڈالر موصول ہوئے تھے۔