پاکستان میں کاریں تیار کرنے والی مختلف کمپنیوں نے متعدد نان فائلرز صارفین کی گاڑیوں کی بکنگ منسوخ کر دی

جمعہ مئی 18:54

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 25 مئی2018ء) پاکستان میں کاریں تیار کرنے والی مختلف کمپنیوں نے متعدد نان فائلرز صارفین کی گاڑیوں کی بکنگ منسوخ کر دی ہے اور اس سلسلے میں مختلف کار ڈیلروں کو خطوط جاری کر دئیے ہیں اس سلسلے میں سب سے پہلے بکنگ گاڑیوں کی منسوخی سوزوکی موٹرز نے کی جس کی اطلاع ملک بھر کے کار ڈیلرز کو دیدی گئی ہے یہ بھی بتایاگیا ہے کہ کار ڈیلرز اب صرف فائلرز کے نام پر انوائس پرائس پر گاڑیاں بک کرسکیں گے جبکہ دوسری طرف کار ڈیلروں نے وفاقی حکومت کی مجوزہ پالیسی سے قبل بک کی جانے والی گاڑیوں کی منسوخی کو غیر قانونی قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ وہ پاکستانی جو بیرون ممالک مقیم ہیں اور پاکستان میں گاڑی خریدنا چاہتے ہیں یا کوئی صاحب حیثیت اپنی بیٹی کی شادی میں اسے بطور گاڑی گفٹ دینا چاہتا ہے تو پھر گاڑی ان افراد کے نام پر کس طرح رجسٹرڈ ہوگی وفاقی حکومت کی جاری کردہ پالیسی پر محکمہ ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن پنجاب کا کہنا ہے کہ یکم جولائی 2018ء سے فائلرز شہریوں کی گاڑیاں رجسٹرڈ کی جائیں گی نان فائلرز کی گاڑی کو رجسٹرڈ نہیں کیا جائیگا محکمہ ایکسائز کا یہ بھی کہنا ہے کہ حکومت کے اس فیصلے سے نہ تو گاڑیوں کی رجسٹریشن پر کوئی فرق پڑیگا اور نہ ہی گاڑیوں کی خریدو فروخت پر حکومت کے اس اقدام کا مقصد ٹیکسوں میں اضافہ اور ٹیکس فائلرز کی تعداد بڑھنا شامل ہے۔