حسین ہارون وزارت خارجہ،علی ظفر وزارت اطلاعات ،ڈاکٹر شمشاد خزانہ اور اعظم خان کو وزارت داخلہ کے قلمبندان دیئے جانے کا امکان

وزارت قوم کی امانت،اپنا کام ایمانداری سے کریں گے،خطے میں قیام امن کی پالیسی کو جاری رکھا جائیگا،نگران وزراء کی گفتگو

منگل جون 18:00

اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 05 جون2018ء) نگران وزرا کے متوقع قلم دانوں میں حسین ہارون کو وزارت خارجہ ،علی ظفر کو وزارت اطلاعات ، وزارت قانون و انصاف ، ڈاکٹر شمشاد اختر کو وزارت خزانہ ،اعظم خان کو وزارت داخلہ اور انسداد منشیات ، سینیٹر خورشید بھروچہ کو انسانی حقوق اور تعلیم ، یوسف شیخ کو وزارت صنعت تجارت اور پورٹ اینڈ شپنگ کے قلمدان سونپے جائیں گے۔

کابینہ ڈویژن آج نگران وزرا کے قلمدانوں کا نوٹیفکیشن جاری کرئے گا،نگران ممکنہ وزیر خارجہ حسین ہارون نے میڈیا سے غیررسمی بات چیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزارت خارجہ میں ملکی پالیسی سے متعلق بریفنگ لوں گا،خطے میں قیام امن کی پالیسی کو جاری رکھا جائے گا ،،افغانستان اور بھارت سے متعلق پالیسی واضع ہے،،پاکستان امن کے لئے کاششش جاری رکھے گا،مجھ پر اعتماد کیا گیا ہے اس پر پورا اترنے کے کوشش کروں گا۔

(جاری ہے)

نگران متوقع وزیر داخلہ اعظم خان نے کہا کہ ملک میں امن وامان کی صورتحال بہتر ہے،،الیکشن وقت پر کرانے کے لئے تمام وسائل بروئے کار لایئں گئے،،نگران حکومت کو جو کام ملا ہے وہ پورا کیا جائے گا،نگران وزیر اطلاعات و قانون و انصاف علی ظفر نے کہا کہ مجھے وزارت اطلاعات اور قانون کا قلمدان دیا جا رہا ہے،میڈیا سے پہلے ہی احترام اور دوستی کا رشتہ ہے،ہمیں جو کام سونپا گیا ہے،وزارت قوم کی امانت ہے ،اپنا کام ایمانداری سے پورا کریں گے،خوشی ہے کہ ہم پر اعتماد کیا گیا۔