اسلام آ باد ، بھکا ریو ں کیخلا ف کر یک ڈائو ن جا ری ،85بھکا ریو ں کو گرفتار کرلیا

ایس ایس پی اسلام آباد نے وفاقی دارلحکومت سے بھکا ریو ں کا خاتمہ کرنے کیلئے پولیس اسکا رڈز تشکیل دیدئیے روزانہ کی بنیا د پر ایس ایس پی آفس میں رپورٹ جمع کروائیں گے

پیر جون 20:36

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 جون2018ء) اسلام آباد پولیس کا وفا قی دارالحکو مت میں بھکا ریو ں کے خلا ف کر یک ڈائو ن جا ری ،85بھکا ریو ں کو گرفتار کرلیا جبکہ ایس ایس پی اسلام آباد نجیب الرحمن بگوی نے وفاقی دارلحکومت سے بھکا ریو ں کا خاتمہ کرنے کیلئے پولیس اسکواڈز تشکیل دیدئیے جو روزانہ کی بنیا د پر ایس ایس پی آفس میں رپورٹ جمع کروائیں گے ۔

گزشتہ روزوفاقی پولیس کی جانب سے گزشتہ دو دن کی رپورٹ جاری کی گئی جس کے مطابق اسلام آباد پولیس نے گزشتہ دو دنو ں کے دوران بھکا ریو ں کے خلاف چلا ئی جا نے والی مہم کے دوران شہر کے مختلف علاقوں سے 85 بھکا ریوں کو شہر کے مختلف مقاما ت سے گرفتار کر کے ان کے خلاف قانو نی کارروائی عمل میں لائی جا رہی ہے ، اس سلسلہ میں بھکا ریو ں کی گرفتار ی کے لیے اسکا ر ڈز تشکیل دئیے گئے ہیں ، جن سے روزانہ کی بنیا د پر رپو ر ٹ لی جارہی ہے ، نا قص کا رکردگی کسی صورت بر داشت نہیں کی جا ئے گی ، ا یس ایس پی اسلام آ باد نے تما م ایس پیز زون کو ہد ا یا ت جا ری کر تے ہو ئے کہا کہ وفاقی دارالحکو مت میں بھکا ریو ں کے خلاف کا رروائی کے عمل میں مزید تیز ی لا ئی جا ئے،مسا جد ،امام با ر گا ہو ں ، تجا رتی مراکز پر کو ئی بھکا ری نظر آ ئے تو اس کے خلاف فوری کا رروائی عمل میں لا ئی جائے،انہو ں نے کہا کہ وفاقی دارالحکومت سے اس مکروہ کاروبار میں ملوث عناصر کا خاتمہ کیا جائے اور اس کارروائی کو مزید موثر بناتے ہوئے جاری رکھا جائے،انہوں نے مزید کہا کہ مختلف گروپس اور کریمینل گینگز جو کہ ان بھکاریوں کی پشت پناہی اور ٹرانسپورٹ مہیا کرنے میں ملوث ہیں اور ان بھکاریوں کو مختلف مقاصد حاصل کرنے کے لئے استعمال کرتے ہیں ان کے ناپاک عزائم کے خلاف آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے، انہو ں نے کہا کہ بھکاری بچوں اور بچیوں کو پکڑ کر شیلٹر ہومز اور چائلڈ پروٹیکشن سنٹرز بھجوایا جائے تاکہ وہاں ان کی تربیت کر کے ان کو ایک عام اور مہذب شہری بنایا جا سکے ۔

(جاری ہے)

مزید بر آں ایس ایس پی اسلام آ باد نے تما م پولیس افسران کو ہد ا یا ت کر تے ہو ئے کہا کہ رمضا ن المبا رک میں سیکور ٹی ڈیو ٹی کو یقینی بنا یا جا ئے ، داخلی و خا رجی راستو ں سمیت مسا جد اما م با رگاہو ں پر سخت چیکنگ کی جا ئے ، پٹر ولنگ کو با مقصد بنا یا جا ئے ، مشکو ک و مشتبہ عنا صر کی کڑ ی نگر انی کی جا ئے تا کہ کسی بھی قسم کے نا خو شگو ار واقع سے بچاجا سکے ۔ ۔ذیشان کمبوہ /اپنے رپورٹر سے

متعلقہ عنوان :