پی ٹی آئی میں بنیادی ورکروں کی جگہ نام نہاد لوٹے، سرمایہ دار امیدواروں نے کارکنان کاہی صفایا کر دیا، شہلا رضا

بدھ جون 21:34

پی ٹی آئی میں بنیادی ورکروں کی جگہ نام نہاد لوٹے، سرمایہ دار امیدواروں ..
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 جون2018ء) پاکستان پیپلز پارٹی کراچی ڈویژن کی سیکریٹری اطلاعات شہلا رضا و امیدوار برائے قومی اسمبلی حلقہ 243 ، امیدوار برائے صوبائی اسمبلی پی ایس 101وکلچر ونگ سندھ کے سیکریٹری اطلاعات ایوب کھوسو اور امیدوار و صدرپی ایس 102 ریاض بلوچ نے اپنے مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ پی ٹی آئی میں تبدیلی تو نہیں آئی مگر بنیادی ورکروں کی جگہ نام نہاد لوٹے، سرمایہ دار، مسترد شدہ اور استعمال شدہ امیدواروں نے پی ٹی آئی کے کارکنان کاہی صفایا کر دیا۔

تبدیلی کا نعرا مارنے والوں نے پانچ سال میں خیبرپختونخواہ میں نہ ڈیم بنائے، نہ گورننس ہائوس ، وزیراعلیٰ ہائوس کو لائبریریوں میں تبدیل کیا، نہ خیبر پختونخواہ میں سرمایہ آیا،نہ لوگوں کو روز کے مواقع دیئے، نہ صوبے کی تعمیر ترقی کیلئے موثر اور عملی اقدامات کئے، اگر کچھ کیا گیا تو صرف اور صرف عمران نیازی کا اے ٹی ایم جہانگیر ترین کا کے پی کے حکومت میں اثرورسوخ نظر آیا۔

(جاری ہے)

انہوں نے کہا کہ گڈ گورننس کے نام پر صوبے کو کنگال کر دیا گیا اربوں کے قرضے لے کر صوبوں کے رہائشیوں کو نسل در نسل غلام بنادیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ عمران نیازی نے سیاست میں غلاظت کا کلچر متعارف کروایا آج پی ٹی آئی کے ٹکٹس پر نہ نوجوان چہرے نظر آرہے ہیں نہ پی ٹی آئی کے بانی ورکرز دیکھائی دیتے ہیں ۔ پی ٹی آئی قومی جماعتوں کے مسترد شدہ لوٹوں کی انجمن بن چکی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی باشعور عوام جان چکی ہے کہ کھیل اور سیاست میں بہت فرق ہوتا ہے اور سیاست کوئی کھیل نہیں ذمہ داری ہے جس کیلئے صرف باتوں سے عوام کی خدمت نہیں ہوسکتی عملی کام سرانجام دینا ضروری ہے۔